یوم دفاع وشہداء: ایک فقیر منش ٹریفک اہل کار کا تذکرہ

جدت ویب ڈیسک ::پاک فوج نے یوم دفاع و شہداء 2018 کو ’ہمیں پیار ہے پاکستان سے’ کے نام سے منفرد انداز میں منانے اعلان کیا ہے.
اس دن کی مناسبت سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے خصوصی پیغام میں‌شہداء پاکستان اور لواحقین کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید کی جو موت ہے وہ قوم کی حیات ہے۔واضح رہے کہ یوم دفاع و شہداء سے متعلق آئی ایس پی آر نے خصوصی نغمہ جاری کیا ہے، ساتھ ہی ریل گاڑیوں کی بوگیوں پر خصوصی تصاویر و پیغامات آویزاں کیے گئے ہیں۔
ایسے میں ہمیں بہ طور قوم اس فقیر منش ٹریفک اہلکار کو یاد رکھنا چاہیے، جسے ابوالحسن اصفہانی روڈ پیراڈائز بیکری کے قریب فائرنگ کرکے شہید کیا گیا تھا.
ٹریفک اہلکار محمد کریم دو برس سے اسی مقام پر تعینات تھا، جہاں محمد کریم کو شہید کیا گیا۔
محمد کریم کی کوئی اولاد نہیں تھی، وہ نمازی اور ایمان دار شخص تھا، جس نے نہ تو کبھی کسی سے رشوت لی، نہ ہی کبھی کسی کو ستایا. یہ درویش صفت اہل کار بروقت ڈیوٹی پر آتا اور چھٹی ہوتے ہی پیدل گھر چلا جاتا۔
محمد کریم جیسے ایمان دار اہل کار اس قوم کا فخر ہیں، جنھوں نے فرائض کی ادائیگی کے دوران جام شہادت نوش کیا۔
یاد رہے کہ ستمبر 2015 میں‌کراچی میں‌ پانچ ٹریفک اہل کاروں کو نشانہ بنایا گیا تھا. اسی طرح اگست 2017 میں کراچی میں ڈی ایس پی ٹریفک حنیف خان کو فائرنگ کرکے شہید کیا گیا تھا۔
رواں برس بھی کوئٹہ سرکی روڈ پر نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ کے نتیجے میں 2 ٹریفک پولیس اہلکار شہید ہوئے تھے.

Leave a Reply

Your email address will not be published.