waseem akhtar

گھوسٹ ملازمین کو برداشت نہیں کیا جائے گا،میئرکراچی

کراچی جدت ویب ڈیسک میئر کراچی وسیم اختر نے کہاہے کہ گھوسٹ ملازمین کو خواہ کہیں سے بھی تعلق رکھتے ہوں مزید ادارے میں برداشت نہیںکیا جائے گا، محکمہ سٹی وارڈنز سے 46 گھوسٹ ملازمین کو برخاست کردیا ہے جبکہ 28ملازمین کو فائنل شوکاز نوٹس جاری کردیئے، تسلی بخش جواب نہ ملنے پر انہیں بھی نوکری سے برخاست کردیا جائے گا، یہ بات انہوں نے گھوسٹ ملازمین کی تحقیقات کے لئے قائم کمیٹی کی طرف سے پیش کی گئی رپورٹ کا جائزہ لیتے ہوئے کہی جس کے مطابق 46 ملازمین کے خلاف کارروائی سندھ لوکل کونسل سروینٹ ای اینڈ ڈی قواعد 1974ئ کے قاعدہ 4 کے تحت عمل میں لائی گئی ہے، میئر کراچی نے اس موقع پر تمام محکمہ جاتی سربراہان کو ہدایت کی کہ فوری طور پر ایسے تمام گھوسٹ ملازمین کی فہرستیں تیار کی جائیں جن کی تنخواہیں افسران کی جیبوں میں جا رہی ہیں اگر محکمہ جاتی سربراہان اور دیگر متعلقہ افسران ایسا کرنے میں ناکام رہے تو ان کے خلاف بھی قواعد کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ، دریں اثنائ میئر کراچی کی ہدایت پر گھوسٹ ملازمین کی انکوائری کے لئے قائم کی گئی کمیٹی نے 46 گھوسٹ ملازمین کو فارغ کرنے کے بعد مزید تحقیقات شروع کردی ہیں جس سے توقع ہے کہ کے ایم سی کے محکموں میں مزید ایسے ملازمین کا انکشاف ہوگا جو اپنی ڈیوٹی پر نہیں آتے جبکہ ان کی تنخواہیں باقاعدگی سے جاری ہو رہی ہیں، میئر کراچی نے کہا کہ ہمیں محکموں کو ٹھیک کرنا ہے اور یہ اسی وقت ممکن ہے جب گھوسٹ ملازمین کا احتساب ہو اور محنتی اور فرض شناس افسران و دیگر اہلکاروں کی حوصلہ افزائی کی جائے، بلدیہ عظمیٰ کراچی میں اب وہی ملازمت پر برقرار رہے گا جو ذمہ داری کے ساتھ اور دفتری اوقات کے مطابق اپنے فرائض ادا کرے گا، گھوسٹ ملازمین کی اب یہاں مزید کوئی گنجائش نہیں ہے لہٰذا تمام غیر حاضر ملازمین اور ان کی سرپرستی کرنے والے افسران اچھی طرح سمجھ لیں کہ اب ایسا نہیں چلے گا، کمیٹی اپنی اگلی رپورٹ جلد ہی میئر کراچی وسیم اختر کو پیش کرے گی جس کی روشنی میں یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ گھوسٹ ملازمین کو ملازمت سے فوری برخاست کردیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.