میانمار میں خطرناک صورتحال سے نمٹنے کی فوری ضرورت ہے،اقوام متحدہ

نیویارک جدت ویب ڈیسک اقوامِ متحدہ نے کہاہے کہ میانمار میں دو ہفتے قبل شروع ہونے والے تشدد کے بعد سے اب تک 2,70,000 روہنگیا مسلمانوں نے بنگلہ دیش میں پناہ لی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق اقوامِ متحدہ کی ایک خاتون ترجمان کا کہنا تھا کہ بنگلہ دیش پناہ لینے والے روہنگیا مسلمانوں کی تعداد 1,64,000 تھی۔خاتون ترجمان کا ان اعداد و شمار کو ‘بہت خطرناک’ قرار دیتے ہوئے کہنا تھا کہ میانمار میں صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے فوری کارروائی کی ضرورت تھی۔پناہ گزینوں کے ادارے برائے مہاجرین کی خاتون ترجمان ویویان ٹین کا کہنا تھا کہ اعداد و شمار میں تازہ ترین اضافہ ‘گذشتہ 24 گھنٹوں کے اندر اندر تازہ ترین اضافے کا عکاس نہیں کرتا لیکن ہم نے مختلف علاقوں میں مزید لوگوں کی شناخت کی ہے جن سے ہم اس سے پہلے واقف نہیں تھے۔ان کا مزید کہناتھاکہ پناہ گزینوں کے موجودہ کیمپ بھر چکے ہیں اور سرحد پار کر کے آنے والے افراد ‘سڑکوں یا جو بھی خالی جگہ تلاش کر سکتے ہیں پر شیلٹرز قائم کر رہے تھے۔پناہ گزینوں کے ادارے برائے مہاجرین کی خاتون ترجمان کے مطابق میانمار سے آنے والے افراد تھکے ہوئے، بھوکے اور پناہ کے لیے بے چین تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.