مکا چوک پرنا معلوم افراد کی فائرنگ ،ڈی ایس پی ٹریفک اورڈرائیورجاں بحق

کراچی جدت ویب ڈیسک کراچی کے علاقے عزیز آباد میں نامعلوم موٹر سائیکل سوار دہشت گردوں نے ٹریفک پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کردی ، جس کے نتیجے میں ڈی ایس پی کریم آباد ٹریفک پولیس حنیف خان اور ان کا ڈرائیور جاں بحق ہوگیا ہے۔وزیراعلیٰ سندھ ، وزیر داخلہ سندھ اور آئی جی سندھ نے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ریسکیو ذرائع کے مطابق فائرنگ کا واقعہ شہید ملت گرلز کالج کے قریب پیش آیا ، جہاں موٹرسائیکل سوار نامعلوم دہشت گردوں نے ڈیوٹی پر موجود ڈی ایس پی ٹریفک پولیس حنیف خان کی گاڑی نمبر ایس پی 189 پر فائرنگ کردی ، جس کے نتیجے میں ڈی ایس پی حنیف خان موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے جبکہ ان کے ڈرائیورفدا عالم شدید زخمی ہوگئے جنہیں طبی امداد کے اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ بھی دوران علان زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسے ۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری نے جائے حادثے کی جگہ کو سیل کردیا جبکہ شہید ڈی ایس پی اور ان کے ڈرائیور کی لاشوں کو عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا گیا۔پولیس کے مطابق حملہ آوروں نے گاڑی کی فرنٹ اسکرین پر اندھا دھند گولیاں برسائیں اور بندوق کا پوا میگزین خالی کیا۔ پولیس کے مطابق حملہ آوروں نے دونوں جانب سے گاڑی پر حملہ کیا، ڈی ایس پی محمد حنیف اپنی گاڑی میں سوار تھے اور فرائص کی انجام دہی کیلئے جا رہے تھے۔ سیکیورٹی اہل کاروں کے مطابق ڈی ایس پی محمد حنیف کی گاڑی پر 15 سے 20 گولیاں فائر کی گئیں۔پولیس کے مطابق ملزمان کی جانب سے پولیس وین پر دوطرف سے فائرنگ کی گئی، جائے وقوعہ سے ملنے والئے خول فارنزک لیب بھیج دیئے گئے ہیں جب کہ کارروائی کا آغازکردیا گیا ہے۔ابتدائی تفتیش کے مطابق دہشت دو موٹر سائیکلوں پر سوار تھے ،حملہ آوروں نے سامنے سے ہی ڈی ایس پی کو نشانہ بنایا، واردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ پہلی کسی واردات میں استعمال نہیں ہوا۔عینی شاہدین کے مطابق حملہ آور دو موٹر سائیکل پر سوار تھے۔حملے کے بعد حملہ آور باآسانی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ دوسری جانب ایڈیشنل اے آئی جی کراچی غلام قادر تھیبونے کہاہے کہ دہشت گردوں نے تعاقب کے بعد حملہ کیا ۔انہوں نے آگے سے حملہ کیا جائے وقوعہ سے جائے وقوع سے نائن ایم ایم کی گولیوں کے 18 خول ملے ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کے واقعت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے آئی جی سندھ سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے ۔سندھ کے وزیر داخلہ سہیل انور سیال نے عزیز آباد فائرنگ کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی کراچی سے واقعے کی فوری رپورٹ طلب کرلی ہیں ، وزیر داخلہ نے شہر بھر میں سیکیورٹی ہائی الرٹ رکھنے اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا حکم دیا ہے۔دریں اثنائ آئی جی سندھ نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے ڈی آئی جی ویسٹ ذوالفقار لاڑک سے رپورٹ طلب کرلی ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.