جے آئی ٹی رپورٹ ‘ شریف خاندان کیساتھ بھارتی حکومت پر بھی لرزہ طاری

کراچی جدت ویب ڈیسک جے آئی ٹی کی رپورٹ شریف خاندان کی طرح بھارتی حکومت اور میڈیا پر بھی بجلی کی طرح گری ہے اور پاک فوج کی دہشت سے لرزہ بھارتی میڈیا نواز شریف کی ممکنہ نا اہلی وبرطرفی کو بھارتی سلامتی کیلئے ایک نیا چیلنج و خطرہ قرار دے رہا ہے کیونکہ اس کے خیال میں نواز شریف کے جانے سے پاک فوج مزید مضبوط ہو گی۔ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا نے اپنی فرنٹ پیج اسٹوری میں جے آئی ٹی رپورٹ کے بعد پاکستان کی سیاسی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اسلام آباد میں نئی حکومت آنے کا مطلب ہوگا کہ خارجہ پالیسی فوجی اسٹیبلشمنٹ کے زیراثرچلی جائے گی جو کہ بھارت کیلئے تقریبا فوجی حکومت کے ہی مساوی ہوگا اور یہ بھی یقینی سمجھنا چاہیے کہ نواز شریف کی ممکنہ برطرفی سے پاک فوج کی طاقت میں اضافہ ہوگا جو بھارت کی سلامتی کیلئے ایک خطرہ ہوگا۔ اخبار مزید لکھتا ہے کہ سعودی عرب جو نواز شریف پر خاص مہربان رہا ہے ،بھی اس دفعہ بڑی حد تک لاتعلق نظر آتا ہے ۔ بھارتی میڈیا کا واویلا متعدد سوالوںوشکوک کو جنم دے رہا ہے کہ کیا میاں نواز شریف کی حکومت فوج کو کمزور کرنے کا سبب بن رہی ہے ؟ وہ گجرات کے مسلمانوں کے قاتل بھارتی وزیر اعظم کو اپنی نواسی کی شادی میں مدعو کرنے اور بھارتی تاجر جندال کو بغیر ویزہ مری لے جانے کے علاوہ بھارت کی کیا خدمت کرتے رہے جو بھارتی حکومت و میڈیا اس قدر گھبراہٹ کا شکار ہو کر واویلا کر رہا ہے ۔ واضح رہے کہ وزیر اعظم میاں نواز شریف کے بھارتی حلقوں میں مفادات ماضی میں بھی منکشعف ہوتے رہے ہیں ۔ وزیر اعظم نے بھارت کے سرکاری دورے میںلندن سے اپنے صاحبزادے کو دہلی بلا کر خاص لوگوں سے خصوصی ملاقاتیں کراچکے ہیں۔ ملک کی خارجہ پالیسی کے حوالے سے بھارتی اخبارات کی تشویش کسی حد تک جائز نظر آتی ہے کیونکہ حکومت آخری برس میں داخل ہو چکی ہے مگر اب تک وزیر خارجہ مقرر نہیں کیا گیا یہ قلمدان وزیر اعظم کے ہی پاس ہے اور جس طرح خارجہ پالیسی چلائی جا رہی ہے اس کے نتیجہ میں اب صرف بھارتی ہی نہیں افغان اور ایرانی سرحد بھی غیر محفوظ ہو چکی ہے ، عرب بحران میں پارٹی بننے کا خمیازہ بھگتنا ابھی باقی ہے ۔ پاک فوج کس قدر مضبوط ہے اوریہ مضبوطی کسی کے آنے جانے سے کس حد تک مشروط ہے ۔ یہ بھارتی میڈیا بھی بخوبی جانتا ہے پھر یہ واویلا کیوں؟

Leave a Reply

Your email address will not be published.