بھارت : شاہی امام برما کے مسلمانوں کی حالت زار پر تڑپ اٹھے

نئی دہلی جدت ویب ڈیسک بھارت کے شاہی امام سید احمد بخاری نے میانمار میں مسلمانوں پر ہونے والے بدترین تشدد اور بھیانک قتل و غارت پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسلامی ممالک کا ہنگامی اجلاس طلب کرنے کے لئے خادم الحرمین ملک سلمان بن عبد العزیز آل سعود کے نام خط لکھ دیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت کے شاہی امام سید احمد بخاری نے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز کے نام لکھے جانے والے خط میں کہا ہے کہ اس وقت میانمار کے روہنگیا مسلمانوں کی جو دردناک صورت حال ہے اس سے آپ بخوبی واقف ہوں گے،وہاں انسانی حقوق کی بڑے پیمانے پر پامالی ہو رہی ہے اور وہاں کی سیکورٹی فورسز اور اکثریتی بودھ آبادی کے ہاتھوں مسلمانوں پر بے انتہا مظالم توڑے جا رہے ہیں جس کے نتیجے میں اب تک ہزاروں مسلمان شہید اور تقریباً ایک لاکھ نقل مکانی پر مجبور ہوئے ہیں، حالات انتہائی نازک اور لرزہ خیز ہیں، وہاں صدیوں سے آباد امن پسند مسلمانوں کے ساتھ بدترین تشدد اور مظالم کا جو سلسلہ چل رہا ہے اس نے دنیائے انسانیت کو ہلا کر رکھ دیا ہے، ان کے سامنے اب اپنے وجود کی بقا کا سوال کھڑا ہو گیا ہے، مظالم سے تنگ آکر نقل مکانی پر مجبور ہونے والے روہنگیا مسلمانوں کے سامنے جائے پناہ اور خوراک کا زبردست مسئلہ پیدا ہو گیا ہے۔شاہی امام نے مزید لکھا ہے کہ اس صورت حال نے پوری دنیا کے مسلمانوں کوبے پناہ کرب و اضطراب میں مبتلا کر دیا ہے،بعض مسلم ممالک کی طرف سے تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے لیکن عالمی ادارے خاموش ہیں۔ بظاہر میانمار کی حکومت کو بھی مظالم کا سلسلہ بند کروانے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے لہٰذا آج ہندوستان سمیت پوری دنیا کے مسلمان آپ کی جانب پر امید نظروں سے دیکھ رہے ہیں، آپ سے گزارش ہے کہ آپ اس انسانی بحران پر اپنی توجہ مبذول فرمائیں اور روہنگیا مسلمان جس کربناک صورت حال سے دوچار ہیں اس سے ان کو نجات دلائیں۔شاہی امام نے کہا کہ ضروری ہے کہ آپ کی طرف سے موجودہ صورت حال پرضروری اقدامات کرنے کیلئے اسلامی ممالک کا ہنگامی اجلاس طلب کیا جائے۔ آپ کا یہ قدم دنیا کی نگاہوں میں تو قابل ستائش ہوگا ہی اللہ تعالی کے نزدیک بھی اجر کا باعث بنے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.