سراج الحق کی تمام سیاست دانوں کی اسکریننگ کی تجویز

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہاہے کہ سربراہ جے آئی ٹی ارکان نے کسی خوف کے بغیر اپنا کام مکمل کیا ٗجے آئی ٹی رپورٹ میں ہر جانب کرپشن ہی کرپشن ہے۔پیر کو میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ چند لوگ کرپشن کیس میں جیلوں میں جائیں تو یہ تاریخی لمحہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی آج بھی یہ مطالبہ کرتی ہے کہ احتساب سب کا ہونا چاہیے اور ہم کسی تعصب ٗ سیاسی دشمنی یا پارٹی مفاد نہیں بلکہ کرپشن کے خلاف ہیں۔سراج الحق نے کہاکہ پاناما اسکینڈل میں جس جس کا نام ہے سب کا احتساب ہونا چاہیے۔ آئین کے 62 اور 63 کے مطابق تمام سیاست دانوں کی اسکریننگ ہونی چاہیے تاکہ کوئی کرپٹ پارلیمنٹ میں نہ رہے۔انہوں نے کہا کہ آج بھی دھمکیاں دی جارہی ہیں کہ محاصرے کریں گے، مگر ہم سپریم کورٹ کو اعتماد دلاتے ہیں کہ ہم اس کے ساتھ ہیں۔امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ ماضی کی طرح اب کوئی ڈنڈا اٹھا کر سپریم کورٹ کی طرف نہیں آسکتااس کیس کے نتیجے میں انشاء اللہ پاکستان کرپشن فری بن جائیگا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ سرکار نے لوگوں کو نکالنے کی دھمکیاں دی ہیں ٗ آج بھی دھمکیاں دی جا رہی ہیں کہ محاصرہ کرلیں گے تاہم قوم نے عدلیہ کی آزادی میں بڑی قربانیاں دی ہیں ، وہ وقت نہیں رہا کہ کوئی بھی ڈنڈا لے کر سپریم کورٹ پر حملہ کردے۔ انہوں نے کہا کہ چاہتے ہیں کہ انصاف بڑے آدمی کو بھی ملے اور غریب کو بھی انصاف ملے، پانچ چھ ہزار لوگ کرپشن کے خاتمے کیلئے جیل بھی جائیں توکوئی مسئلہ نہیں ہے اڈیالہ جیل میں جگہ کم ہے تو کوٹ لکھپت جیل بھی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.