کسی کا باپ ہم کو باہر جانے سے نہیں روک سکتا ،نیب نے شریف فیملی کی درخواست مسترد کردی

جدت ویب ڈیسک ::کیپٹن صفدر نے کہا کہ کسی کا باپ ہم کو باہر جانے سے نہیں روک سکتا ،احتسابکسی کا باپ ہم کو باہر جانے سے نہیں روک سکتا ،نیب نے شریف فیملی کی درخواست مسترد کردیعدالت نے نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی حاضری سے استشنیٰ کی درخواست مسترد کر دی ۔ نیب عدالت کے جج محمد بشیر نے محفوظ فیصلہ سنا دیا ۔ نواز شریف ، کیپٹن صفدر اورمریم نواز نے دو ہفتے کے لیے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست کی تھی ۔ شریف فیملی کے ون پارک ھائیڈ کے فروخت شدہ فلیٹ کو بھی ضمنی ریفرنس کا حصہ بنا دیا ۔ فلیٹ کی خرید و فروخت کی ٹرانزکشن کی تفصیلات بھی حاصل کر لی گئیں ۔ فلیٹ 43.9 ملین پاؤنڈ میں فروخت کیا گیا تھا ۔ نیب ذرائع کے مطابق نئے شواہد کے بعد ریفرنس اور بھی مضبوط ہو گیا ہے ۔دوران سماعت نیب پراسیکیوٹر نے اعتراض عائد کرتے ہوئے کہا کہ پہلے بھی انہوں نے استثنیٰ حاصل کی مگر لندن نہیں گئے ، اس وقت پر استثنیٰ نہیں بنتا،،تاخیری حربے استعمال کیے جا رہے ہیں ۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ مقدمات میں پہلے ہی 2 ملزم اشتہاری ہیں ۔ نیب پہلے ہی ان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے خط لکھ چکا ہے ۔ اس پر احتساب عدالت کے جج نے استفسار کیا کہ کیا ان کے نام ای سی ایل میں ڈال دیے گئے ہیں ؟ ۔ ایوان فیلڈ پراپرٹی کے بعد نوازشریف کے خلاف العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز بھی دائر کر دیئے ۔ العزیزیہ اور فلیگ شپ کیسز کے ضمنی ریفرنسز میں نواز شریف، بیٹے حسین نواز اور حسن نواز کے خلاف نئے شواہد پیش کئے گئے ہیں ۔ فلیگ شپ ریفرنس 16 آف شور کمپنیوں سے متعلق ہے ۔ العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس میں شریف فیملی پر الزام ہے کہ انہوں نے گزشتہ سالوں کے دوران کروڑوں روپے بیرون ملک منتقل گئے تھے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.