غیر قانونی حصہ گراتے ہوئے پوری عمارت زمین بوس

کراچی جدت ویب ڈیسک گلشن اقبال کراچی میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی جانب سے عمارت کا غیر قانونی حصہ گراتے ہوئے پوری عمارت زمیں بوس ہوگئی، لوگوں کے مشتعل ہونے پر ایس بی سی اے کی ٹیم گاڑیاں چھوڑ کر فرار ہوگئی، بلڈر اوراس کے ساتھیوں کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیاہے۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلشن اقبال بلاک ون میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے آپریشن میں تین منزلہ عمارت کا غیر قانونی حصہ گرانے کا کام شروع کیا، اس دوران ہیوی مشینری کے استعمال سے غیر قانونی حصے کیساتھ ساتھ پوری عمارت ہی ڈھے گئی۔اس موقع پرعمارت کو گرانے والی کرین بھی ملبے تلے دب گئی، عمارت گرنے سے آس پاس کھڑی گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا، واقعے کے خلاف علاقہ مکینوں کے مشتعل ہونے پر ایس بی سی اے کی ٹیم گاڑیاں چھوڑ کر فرار ہو گئی۔واقعے کے بعد قانون نافذ کرنے والیاداروں نے عمارت کوگھیرے میں لے لیا، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے مطابق مذکورہ عمارت ذاتی رہائش کے لیے منظور کی گئی تھی لیکن خلاف ضابطہ اس میں فلیٹس بنائے جارہے تھے۔بعد ازاں کار سرکار میں مداخلت پرگلشن اقبال تھانے میں مقدمہ درج کرلیا گیا، مقدمے میں تعمیرات کرنے والے بلڈر شکیل احمد اور اس کے ساتھیوں کونامزد کیا گیاہے۔مقدمہ ایس ڈی سی اے کیسینئرافسرکی مدعیت میں درج کیا گیا، ایف آئی آر میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ ملزمان نے سرکاری کام میں مداخلت کرتے ہوئے پولیس موبائل سمیت دیگر گاڑیوں کونقصان پہنچایا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.