.بیس روز احتجاج کے بعد قائداعظم یونیورسٹی میں تدریسی عمل مکمل بحال ہوگیا

جدت ویب ڈیسک :ذرائع کے مطابق یونیورسٹی سنڈیکیٹ نے برطرف طلبا کو بحال نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ تمام سنڈیکیٹ ممبران کا اتفاق ہے کہ برطرف طلبا کو بحال نہیں کیا جائے گا۔ کمیٹی صرف طلبا کو سزائیں دینے کے طریقہ کار کو دیکھے گی۔ 20روز احتجاج کے بعد قائداعظم یونیورسٹی میں تدریسی عمل مکمل بحال ہوگیا ۔ تاہم ہڑتالی طلبہ کی ناراضگی برقرار ہے۔ ذرائع کے مطابق یونیورسٹی سنڈیکیٹ کے ممبران برطرف طلبا کو بحال نہ کرنے پر متفق ہیں۔بیس دن کی ہڑتال اور احتجاج اور پھر دو روز تک گومگو کی صورتحال کے بعد قائداعظم یونیورسٹی میں تدریسی عمل مکمل بحال ہوگیا ۔طلبہ نے جامعہ میں پڑھائی کی بحالی پر خوشی کا اظہار کیا۔پہلے مار کٹائی کرنے اور پھر ملک کی بہترین یونیورسٹی کو 20 تک یرغمال بنائے رکھنے والے ہڑتالی طلبہ کی ایک نہ چل سکی۔ پولیس کی بڑی تعداد کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کے لیا ہمہ وقت یونیوسٹی میں موجود رہی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.