سپریم کورٹ نے صرف آپ کو بددیانت قراردیا، شکراداکریں سپریم کورٹ نے جیل نہیں بھیجا، آپ اب شرم کرو

جدت ویب ڈیسک :عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ ، سپریم کورٹ نے صرف آپ کو بددیانت قراردیا، شکراداکریں سپریم کورٹ نے جیل نہیں بھیجا، آپ کو شرم ہوتی تو سر جھکا کر گھربیٹھ جاتے، منہ چھپانے کے بجائے جی ٹی روڈپراحتجاج کاسوچ رہے ہیں۔ نوازشریف بددیانتی لوٹ مار کا نام ہے تفصیلات کے مطابق عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے ناصر باغ جلسے میں کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اظہار یکجہتی کیلئے آنے والوں کا شکر گزار ہوں، اللہ نے سخت دھوپ اور تپش کو دور کیا ہے، ایک شخص اقتدار سے برطرف ہوا اور پوچھتا ہے میرا قصور کیا ہے۔طاہرالقادری نے کہا کہ میں پوچھتا ہوں 17جون 2014کو 14بے گناہ لوگوں کی لاشیں گرائی گئیں، پوچھتا ہوں ماڈل ٹاؤن میں 14افراد کو قتل کیا گیا ان کا قصور کیا تھا، اللہ کے ہاں انصاف ہے، دیر ہوسکتی ہے اندھیر نہیں، آپ لوگوں نے ظلم کی انتہا کر دی تھی، خون کو پانی سمجھ لیا تھا، درندگی کے ساتھ ماڈل ٹاؤن میں بے گناہ لوگوں کی لاشیں گرائیں۔طاہرالقادری نے کہا کہ جس آزاد عدلیہ کیلئے تحریک چلائی اسی نے فیصلہ دیا، جمہوریت مینڈیٹ کا اس سے بڑھ کر حیا کیا ہوگی، آپ کے نااہل ہونے کے باوجود جس پر اشارہ کیا وہ وزیراعظم بنا، آپ کی اسمبلیاں نہیں توڑیں نہ ہی حکمرانی کا حق چھینا، نئی حکومت بنانےکی اجازت دی اس سے بڑھ کر جمہوری مینڈیٹ کیا ہوگا، سب کچھ آپ کے ہاتھ میں ہے پھر کہتے ہیں جمہوریت نہیں ہےانکا کہنا تھا کہ رائیونڈ والے اقتدار پر بیٹھیں تو جمہوریت ہے ، پارٹی کی حکومت ہوتو جمہوریت نہیں رائیونڈ والے اقتدار میں ہوتو جمہوریت ہے، نوازشریف بددیانتی لوٹ مار کا نام ہےانھوں نے کہا آپ نےہرجگہ خطاب کیا،آپ نےجھوٹ بولا قوم کو دھوکا دیا، آپ پارلیمنٹ کےفلور پر جھوٹ بولتے رہے، سپریم کورٹ میں بھی جھوٹ بولا،جعلی دستاویزات بنائے، آپ جعلی ترمیم شدہ دستاویزات پیش کرتے رہے، آپ نے جعلی قطری خط پیش کیا۔ جعلی دستاویزات جمع کرانے پر سپریم کورٹ7سال کی قیدسزا دیتی ہے، سپریم کورٹ نے نرمی برتی ورنہ آپ کو وہیں ہتھکڑی لگ سکتی تھی۔عوامی تحریک کے سربراہ کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے صرف آپ کو بددیانت قراردیا، سپریم کورٹ نے کہا آپ صادق اورامین نہیں رہے،نااہل قراردیا، شکراداکریں سپریم کورٹ نے جیل نہیں بھیجا، سپریم کورٹ کے5ججز آپ کو جھوٹا اور بددیانت کہتے ہیں ، آپ کو شرم ہوتی تو سر جھکا کر گھربیٹھ جاتے، منہ چھپانے کے بجائے جی ٹی روڈپراحتجاج کاسوچ رہے ہیں۔انکا کہنا تھا کہ جسٹس باقرنجفی کا کمیشن بنایا اور کہا انگلی میری طرف اٹھی تو مستعفی ہوں گا، جسٹس باقر نجفی کمیشن میں کہا گیا ماڈل ٹاؤن میں قتل عام کرانے والاشہباز شریف تھا،آپ نے کمیشن کی رپورٹ دبا دی۔طاہر القادری نے مزید کہا کہ اللہ کی طرف مواخذےاور انتقام کاوقت آگیا ہے، ڈیڑھ سال تک آپ کوبےگناہی ثابت کرنےکاموقع دیاگیا، آپ کےخاندان کےایک ایک فردکوصفائی کے لیے بلایاگیا، بتاؤلوٹ مارنہیں توپیسہ کہاں سےبنایاگیاتھا، آپ کو273دن صفائی کا موقع دیا گیا

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.