بارود کی بارش میں نماز پڑھنے والے فلسطینی کی بےنیازی نےدُنیا کو جھنجوڑ دیا

تل ابیب ( ویب ڈیسک ) یوم القدس کے موقع پر عبادت کرنے والے فلسطینیوں پر اسرائیلی فو جیوں نے یلغار کی ٗ ان پر بہیمانہ آنسو گیس اور گولیاں برسائیں مگر دوران ایک فلسطینی نماز کی ادائیگی میں مصروف رہا اور اسے کوئی فکر نہ رہی کہ اس کے ارد گرد گولیاں چل رہی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی فوج کی جارحیت گزشتہ روز شدت اختیار کر گئی جب مغربی کنارے پر معصوم اور بے گناہ فلسطینیوں پر گولہ بارود کی بارش کر دی گئی جس کی تاب نہ لاتے ہوئے دو فلسطینی شہید ہوگئے ٗ یوم القدس کے موقع پر فلسطینی کو مسجد اقصیٰ میں عبادت کرنے سے روکنے کیلئے فلسطینی فوج نے تمام حدود پار کر دیں178فلسطینی زخمی ہوگئے۔  اس فلسطینی کی ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہو گئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ اسرائیلی آرمی آنسو گیس اور فائرنگ کر رہی ہے ٗ کئی لوگ جان بچانے کیلئے بھاگ رہے ہیں مگر یہ مسلمان نماز پڑھنے میں مصروف ہے

یوم القدس کے موقع پر فلسطینی مسجد اقصیٰ میں عبادت کی غرض سے پہنچے جہاں پر اسرائیلی فوج نے ہمیشہ کی طرح انہیں روکا اور جب اس معاملہ پر تلخی بڑھی تو اسرائیلی فوج نے بہیمانہ تشد د شروع کر دیا جس کی زد میں آکر دو فلسطینی شہید اور 178 زخمی ہوگئے ہیں مگر ایک طرف گولہ بارود کی بارش جاری تھی اگر دوسری طرف ایک فلسطینی مسجد اقصیٰ کے احاطے میں نماز کی ادائیگی میں مصروف رہا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.