سندھ انسداد بدعنوانی ایجنسی کے قیام کا مسودہ تیار

کراچی جدت ویب ڈیسک حکومت سندھ نے صوبائی اسمبلی سے نیب قوانین کے خاتمے کا بل پاس کرانے کے بعد صوبے میں نئے احتساب قانون کا مسودہ تیار کرلیا ہے ۔نیب کے متبادل کے طور پر قائم کےے جانے والے ادارے کا نام ’’سندھ انسداد بدعنوانی ایجنسی‘‘ رکھا گیا ہے ۔مجوزہ ایجنسی کے سربراہ کی تقرری کا اختیار سندھ اسمبلی کی 8رکنی کمیٹی کو ہوگا ۔تفصیلات کے مطابق حکومت سندھ نے نیب کے قانون کو تبدیل کرنے کی تیاریاں مکمل کرلی ہیں ۔اس حوالے سے نئے احتساب قانون کا مسودہ تیار کرلیا گیا ہے ۔نئے قانون کے مطابق صوبے میں اب نیب کی جگہ کرپشن کی روک تھام کے لیے ’’سندھ انسداد بدعنوانی ایجنسی‘‘ کا قیام عمل میں لایا جائے گا ۔ سندھ اینٹی کرپشن ایجنسی میں چیئرمین کی تعیناتی سندھ اسمبلی کی8رکن کمیٹی کے کریگی۔اس کمیٹی کا نام اکاؤنٹیبلٹی اینڈ ٹرانسپرنسی ہوگا اور اس کے چیئرمین سند ھ اسمبلی کے اسپیکر ہوں گے ۔کمیٹی کی سفارشات پر گورنر سندھ سے منظوری لی جائیگی ۔نئے احتساب قانون کے مسودے میں تجویز کیا گیا ہے کہ پراسیکیوٹر جنرل،ڈائریکٹر جنرل،ڈائریکٹر انویسٹی گیشناور ڈائریکٹر انٹرنل کنٹرول بھی سندھ اسمبلی کمیٹی مقرر کریگی۔ ڈائریکٹر انٹرنل کنٹرول اینٹی کرپشن ایجنسی کی کارکردگی کا احتساب کرسکے گا۔ اکاونٹبلٹی اینڈ ٹرانسپرنسی کمیٹی کی مدت 5سال ہوگی۔ چیرمین اینٹی کرپشن ایجنسی کا تقرر تین سال کی مدت کے لئے ہوگا

Leave a Reply

Your email address will not be published.