نوازشریف کی حمایت کرنیوالے بھی مجرم ہیں‘ عمران خان

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہاہے کہ تمام چیزیں سپریم کورٹ میں جمع کر ادیں، تاثر دیا جارہاہے کہ میرا اور شریف خاندان کا کیس ایک ہی ہے، میں نے باہر پیسہ کمایا اور پاکستان لایا شریف خاندان نے منی لانڈرنگ کر کے پیسہ باہر بھجوایا دنیا میں کہیں خیراتی اداروں کو نشانہ نہیں بنایا جاتا ¾ خواجہ آصف کو دنیا اورآخری کی فکر کر نی چاہیے پوری قوم فیصلے کا انتظار کررہی ہے امید ہے اندھیری رات سے قوم کو نجات ملے گی ۔اتوار کو یہاں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بابر اعوان ،نعیم الحق اور فواد چودھری کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ آج کے اخبار پڑھے تو ایسے لگا کہ عمران خان کی منی ٹریل نہیں ملی ۔ انہوںنے کہاکہ شریف خاندان یہ تاثر پیدا کر رہا ہے کہ باقی بھی چور ہیں یہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ میرا اور شریف خاندان کا کیس ایک ہی ہے ۔انہوںنے کہاکہ میں عوام کو بتانا چاہتا ہوں کہ شریف خاندان کے کیس میں منی لانڈرنگ ٹیکس چوری ہوئی اور عدالت میں انہوں نے جھوٹ بولا ہے انہوںنے بتایا کہ میرے اوپر کیا کیس ہے ؟ میں نے باہر سے پیسہ کمایا اور پاکستان لایا انہوںنے کہاکہ بنی گالہ کی اراضی کا ریکارڈ ہے انہوںنے بتایا کہ عوام مجھے خیرات دیتی ہے کیونکہ وہ مجھے امانت دار سمجھتی ہے میں عوام کے سامنے خود کو پیش کرنا چاہتا ہوں عمران خان نے کہاکہ مجھ پر الزام لگا کہ لندن کے فلیٹ کا پیسہ کیسے آیا ؟اس کا سارا منی ٹریل جمائما کے اکائونٹ کی ڈ یٹیل کی صورت موجود ہے ۔عمران خان نے کہاکہ لندن کا فلیٹ کس پیسہ سے خریدا اس کی دستاویزات بھی دیں اور میں نے کیری پیکر کا خط بھی پیش کیا کہ کیسے پیسہ آیا ۔ عمران خان نے کہاکہ ایک اخبار نے لکھا کہ قطری خط ہے میں کہتا ہوں کہ اسٹن رابرٹ آج بھی زندہ ہے جس نے کئی کرکٹر سے معاہدے کئے یہ اس کا معاہدہ ہے یہ 25 ہزار ڈالر دیگر کرکٹرز کا بھی معاہدہ تھا انہوںنے کہاکہ جاوید میانداد ،ماجد خان ،ظہیر عباس موجود ہیں ہم نے ایک ساتھ معاہدہ کیا تھا انہوںنے کہاکہ قطری خط نواز شریف کا تھا جو آج تک نہیں بتا سکا ۔انہوںنے کہاکہ سسیکس کلب کے ساتھ بھی کرکٹ کھیلی۔ مشتاق احمدنے میرے18سال بعدسسیکس کیلئے کاؤنٹی کرکٹ کھیلی اگر مشتاق احمد کو 70ہزارپائونڈ سالانہ ملتا تھا تو مجھے کتنا ملتا ہوگا۔ عمران خان نے کہاکہ یہ ریکارڈ نہیں ملاکہ مجھے کتنے پیسے ملتے تھے اس لیے مشتاق کاکنٹریکٹ لگایا سسیکس کلب میں میرا 33فیصد ٹیکس بھی کٹتا تھا۔ انہوںنے کہاکہ ایک لاکھ نوے ہزار پائونڈ بینیفٹ کی مد میں ایک سال میں ملا کون کہتا ہے کہ منی ٹریل نہیں ہے انہوںنے کہاکہ کوئی بھی میرے ٹیکس سے متعلق چیک کرنا چاہتا ہے تو میں خود لیٹر دوں گا دیکھ سکتا ہے انہوںنے کہاکہ حسین نواز تو ڈیڈ بھی نہ دکھا سکے میں نے مورگیج دکھا دی میرا کوئی روپیہ باہر نہیں نہ ہی کچھ بے نامی ہے انہوںنے کہاکہ شریف خاندان کے اور ان کے بچوں کی اربوں کی پراپرٹی ہے عمران خان نے کہاکہ میرا فلیٹ 1984 میں 60 لاکھ کا تھا ۔ خواجہ آصف پر تنقیدکرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ خواجہ آصف کو آخرت کی فکر کرنا چاہئے اس کوڈر ہے کہ اس کی باری بھی آنی ہے انہوںنے کہاکہ اپنی چوری بچانے کیلئے خیراتی ادارہ کے بارے بات کرتے ہیں شوکت خانم کے اکائونٹ میں جو غلط ہے عدالت لائیں یہ شریف خاندان کے اثاثے نہیں ۔ عمران خان نے کہا کہ آپ کارروائی کیوں نہیں کرتے چار سال سے گھٹیا الزامات لگا رہا ہے عمران خان نے کہاکہ جو لوگ نواز شریف کی حمایت میں نکل رہے ہیں وہ بھی مجرم ہیں عمران خان نے کہاکہ مریم نواز چار محلات کی مالکہ نکلی ہیں نواز شریف ایف زیڈ ای کمپنی کے چیئرمین نکلے۔ چیئر مین پی ٹی آئی نے کہا کہ گلف اسٹیل جسٹس ڈیپارٹمنٹ دبئی نے کہا کہ وہ نقصان میں تھی انھوں نے جعل سازی کی اور عدالت میں جاکر جھوٹ بولا انہوںنے کہاکہ قوم فیصلے کا انتظار کررہی ہے اور ہمیں امید ہے قوم کو اس اندھیری رات سے نجات ملے گی ۔ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ برطانوی ان لینڈریونیوسے فلیٹ کی خریدوفروخت کی معلومات لی جاسکتی ہے تاہم حکمران ابھی تک لندن فلیٹس کامنی ٹریل ثابت نہیں کرسکے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.