fire in house

ہندوانتہاپسندوں کا کراچی میں حملہ‘ گھرنذرآتش‘ متعددافرادزخمی

کراچی جدت ویب ڈیسک ہندوئوں کا مسیحیوں کے گھروں پر حملہ‘ گھرنذرآتش،جناح اسپتال مدراسی پاڑہ کے بپھرے ہندئووں نے مسیحیوں کا جینا محال کردیا‘شراب پی کر غل غپاڑہ عام ،نشے میں دھت ہندو ئوںنے مسیحیوں پردھاوا بول دیا‘ کرسچن نوجوانوں پر تشدد‘ چادرچاردیواری کا تقدس پامال۔تفصیلات کے مطابق صدر تھانے کی حدود جناح اسپتال مدراسی پاڑہ میں گزشتہ روز مذہبی تہوار پر شراب کے نشے میں دھت پرکاش نامی ہندونوجوان نے کرسچن بچے کو تھپڑمارے منع کرنے پر دیگر ہندونوجوانوں کیساتھ ملکراپنے کمپائونڈ میں قائم مسیحیوں کے گھروں پر دھاوا بول دیا، چھتوں سے مسیحیوں کے گھروں میں گھس گئے،دیواریں توڑ دیں، گھر کو آگ لگادی، موٹرسائیکل کو بھی توڑ دیا جبکہ مسیحیوں کے گھروں میں موجود خواتین اور بچوں پر بھی تشدد کیا گیا۔روکنے پر مسیحی نوجوانوں پر بھی حملہ کردیا جس میں متعدد افراد زخمی ہوئے۔ پولیس کے موقع پر پہنچے کے بعد ہندو خواتین نے موبائلوں کا گھیرائو کرلیا اور ملزمان کو چھڑا لیا۔ متاثرین کا کہنا ہے کہ ہندونوجوانوں کی جانب سے خواتین کو تنگ کرنا اور تھپڑ مارنا اور بچوں اور نوجوانوں کے ساتھ مارپیٹ عام ہے ۔مدراسی پاڑہ میں ہندواکثریتی علاقے میں مسیحیوں کے گھروں میں گھس جانا اور ان کو پریشان کرنا معمول بن چکا ہے۔ متاثرین کا کہنا تھا کہ ہم عرصہ دراز سے ہندوئوں کے ظلم و ستم کا شکارہیں ہمارے حکومت سے گزارش ہے کہ ہمیں تحفظ فراہم کیاجائے اور نقصان کا ازالہ کیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.