نیشنل بینک کی چھت گرگئی ‘عملہ شدید زخمی

کراچی جدت ویب ڈیسک نیشنل بینک کی خستہ حالی کے سبب چھت اچانک گرگئی جس سے بنک افسر ذولفقار شیخ شدید زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ دنوں مذکورہ بنک کے اوقاتِ کارمیں وقفے کے دوران چھت کا ایک حصہ ٹیبل پر آگرا جہاں ذولفقار شیخ بیٹھے تھے جو شدید زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا جہاں انہیں بارہ ٹانکے آئے۔ واضح رہے کہ مذکورہ کائونٹر پر بزرگ پنشنروں کو ڈیل کیا جاتا ہے پینشنر زبڑی تعداد میں ٹیبل کے گرد کھڑے رہتے ہیں اتفاق سے حادثے کے وقت کائونٹر خالی تھا ورنہ متعدد جانیں ضائع ہوجاتیں۔ واضح رہے کہ مذکورہ برانچ 60سال پرانا ہے جہاں 10ہزار سے زائد اکائونٹ ہولڈرز ہیں جن کا کوئی پرسانِ حال نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق نیشنل بنک کے توسیع و مرمت کا کام گذشتہ 15سال سے التوا کا شکار ہے تاہم بنک انتظامیہ کو اس کی کوئی پراہ نہیں ہے بنک ملازمین کا کہنا ہے کہ انجنیئرنگ ڈیپارٹمنٹ اور اعلیٰ انتظامیہ کے مابین کمیشن طے نہ ہونے کی وجہ سے کام میں ہاتھ نہیں لگایا جاتا جس کے باعث بنک کباڑ خانے کا منظر پیش کر رہا ہے۔ بنک کا مینجر آپریشن ایک کھولی میں بیٹھنے پر مجبور ہے۔ جبکہ بنک کے واش روم میں واٹر کولر رکھا گیا ہے جہاں تعفن پھیلا رہتا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ بنک کی خستہ حال عمارت کی بجلی وائرنگ اُدھڑ گئی ہے جگہ جگہ تاریں لٹک رہی ہیں جن میں بجلی بھی موجود ہوتی ہیں اگر اس جانب فوری توجہ نہ دی گئی تو کوئی دوسرا حادثہ بھی رونما ہوسکتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ SPITقائدآباد برانچ کی توسیع و مرمت کا کام فوری طور پر شروع نہ کیا گیا تو اکائونٹ ہولڈرز بنک کے اعلیٰ افسران کے خلاف سڑکوں پر نکلنے پر مجبور ہوں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.