بارش کی تباہ کاریاں‘ کراچی اور کوئٹہ کازمینی رابطہ منقطع

کراچی /خضدارجدت ویب ڈیسک بلوچستان میں شدید بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آ گئی جس کے باعث بخالو کے مقام پر پل پانی میں بہہ گیا اور کراچی اور کوئٹہ کے درمیان زمینی رابطہ منقطع ہو گیا اطلاعات کے مطابق شدید بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آ گئی اور حب اور خضدار کے درمیان بخالو کے مقام پر پل پانی میں بہہ گیا ¾ پل ٹوٹنے کے باعث دونوں اطراف گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں اور کوئٹہ سے کراچی کا زمینی رابطہ منقطع ہو کر رہ گیا۔وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثنائ اللہ زہری نے پل ٹوٹنے کا نوٹس لیتے ہوئے ضلعی انتظامیہ کو فوری طور پر متبادل راستہ تیار کرنے کی ہدایت کی ہے جب کہ ڈپٹی کمشنر خضدار سہیل الرحمان بلوچ نے متبادل راستے کے لئے ہیوی مشینری کو موقع پر بھیج دیا ہے اور لیویز نے خصدار اور وڈھ کے مقام پر ٹریفک کو روک لیا ہے اس کے علاوہ موسیٰ خیل، قلات، زیارت اور ژوب میں بھی شدید بارشوں کے باعث کئی ایکٹر پر کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں اور مکانات کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ادھر کراچی کے مختلف علاقوں میں ہلکی اورتیزبارش کا سلسلہ اتوار کو بھی جاری رہا جس کے باعث موسم خوشگوارہوگیا ہے ¾ آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید بارش کا امکان ہے۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ شہرمیں 25 کلومیٹرکی رفتار سے سمندری ہوائیں چل رہی ہیں، صبح کم سے کم درجہ حرارت 26.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا شہرمیں ہلکی بارش کی وجہ سے سڑکوں پرپھسلن ہوگئی جس کے نتیجے میں گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کومعمولی نوعیت کے حادثات پیش آئے، بارش کے نتیجے میں متعدد فیڈرزٹرپ ہوگئے جس کے باعث مختلف علاقوں میں بجلی غائب ہوگئی جب کہ تاحال کوئی جانی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔محکمہ موسمیات کے مطابق اب تک لانڈھی 12.5، فیصل بیس 8، ائیرپورٹ 6.2، نارتھ کراچی 5 اور صدر میں 3 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جبکہ سب سے زیادہ بارش گلشنِ حدید میں 15 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.