ایف بی آر اب بے نامی جائیدادضبط کرسکے گی نیا قانون متعارف

جدت ویب ڈیسک :بے نامی پلاٹ، گھر ، دوکان ،فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے بے نامی جائیداد ضبط کرنے کے قانون پر عملدرآمد کیلئے رولز متعارف کرانے کا فیصلہ کر لیا جس کیلئے نظر ثانی شدہ رولز کا مسودہ توثیق کیلئے لاء ڈویژن کو بھیج دیا گیا۔رولز آنے کے بعد وفاقی حکومت کسی بھی بے نا می جائیداد کو بحق سرکار ضبط اور نیلام کرسکے گی۔ ذرائع نے بتایا کہ غیر قانونی ذرائع سے حاصل آمدنی و اثاثہ جات ٹیکس چوری کیساتھ ٹیررازم فنانسنگ کیلئے استعمال ہونے کا بھی خدشہ تھا جسے روکنے کیلئے وزارت خزانہ نے قانون سازی کا عمل 2008 میں شروع کیا، 2017 میں یہ قانون نافذ کیا۔ذرائع کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو حکام کا کہنا ہے کہ آئندہ ہفتے تک نظر ثانی شدہ رولز کے مسودے کی توثیق کا امکان ہے، توثیق کے بعد نوٹیفکیشن کے ذریعے ان رولز کا اطلاق کردیا جائے گا۔ وفاقی حکومت بے نامی جائیدادیں ضبط کرنے کا “بے نا می ٹرا نزیکشن ایکٹ 2017 متعارف کراچکی ہے لیکن مکمل عملدرآمد کیلئے رولز متعارف کرانا باقی تھے۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.