نیب نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی جاتی امرا میں رہائش گاہ پر نوٹس چسپاں کردیئے،جائیداد کی خریدو فروخت پر پابندی عائد

کراچی جدت ویب ڈیسک : پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میںنیب نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی جاتی امرا میں رہائش گاہ پر بھی نوٹس چسپاں کردیا ہے اور نوٹسز جاتی امرا کے گھر کے مین گیٹ پر چسپاں کرائے گئے ہیں۔جب کہ نوٹسز پر نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کے نام پردرج ہیں۔نیب کا کہنا ہےکہ جاتی امرا میں نوازشریف کی رہائش گاہ کسی کو فروخت نہیں کی جاسکے گی۔نیب کے مطابق نوٹس کی کاپیاں چیئرمین ایس ای سی پی ، ڈی جی ایکسائز پنجاب ،ڈی سی لاہور اور تمام بینکوں سمیت دیگر متعلقہ حکام کو بھجوادی گئیں۔واضح رہےکہ شریف خاندان کے خلاف تین ریفرنس دائر کیے گئے ہیں جو لندن فلیٹس اور آف شور کمپنیوں سے متعلق ہیں جب کہ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے رکھنے پر ریفرنس بنایا گیا ہے۔نیب نے شریف خاندان کے خلاف حدیبیہ پیپر ملز کیس دوبارہ کھولنے کے لیے سپریم کورٹ میں اپیل بھی دائر کردی ہےشریف خاندان اور اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر ہوچکے ہیں جس پر عدالت کی جانب سے طلب کیے جانے کے باوجود بھی شریف خاندان اور اسحاق ڈار پیش نہیں ہوئے جب کہ عدالت نے اسحاق ڈار کے قابل ضمانت وارنٹ بھی جاری کردیئے ہیں۔نیب کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی جانب سے جاری نوٹسز جاری کیے گئے ہیں۔وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو اسلام آباد کے بعد لاہور میں بھی ان کی رہائش گاہ پر نوٹس بھیج دیا جو انہیں رات گئے وصول کرایا گیا ہے۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.