ملتان میں غیرت کے نام پر ایک اور خاتون قتل

ملتان جدت ویب ڈیسک صوبہ پنجاب کے شہر ملتان میں ایک نوجوان نے پسند کی شادی کرنے والی اپنی بہن کو عدالت کے باہر فائرنگ کرکے مبینہ طور پر غیرت کے نام پر قتل کردیا۔پولیس کے مطابق راجن پور سے تعلق رکھنے والی خاتون کلثوم بی بی نے چند ماہ قبل پسند کی شادی کی تھی اور بیان دینے کے لیے خاوند اور وکیل کے ہمراہ لاہور ہائی کورٹ کے ملتان بینچ آئی تھیں۔تاہم عدالت کے باہر خاتون کے بھائی نے فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں کلثوم بی بی موقع پر ہی جاں بحق جبکہ ان کے شوہر رفاقت اور وکیل سہیل زخمی ہوگئے۔واقعے کے زخمیوں کو فوری طور پر نشتر ہسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ پولیس نے جائے وقوع سے شواہد اکھٹا کرنے کا آغاز کردیا۔پولیس کے مطابق ملزم کو گرفتار کرکے اسلحہ برآمد کرلیا گیا۔ملک میں غیرت کے نام پر قتل کے رجحان میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے، ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں ہر سال عزت کے نام پر ایک ہزار سے زائد خواتین کو نشانہ بنایا جاتا ہے اور ایسا اکثر خاندان کے افراد کی جانب سے ہوتا ہے۔اب تک ملک میں غیرت کے نام پر قتل کے کیسز کے ملزمان، جن میں عام طور پر خاتون کے اپنے قریبی رشتہ دار ہی شامل ہوتے ہیں، گرفتاری کے چند روز بعد ہی اس لیے آزاد ہوجاتے ہیں کیونکہ ورثا انہیں معاف کردیتے ہیں۔یاد رہے کہ گذشتہ سال 16 جولائی کو ملتان کے علاقے کریم آباد میں ماڈل قندیل بلوچ کو ان کے بھائی نے غیرت کے نام پر قتل کردیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.