رفتار بڑھانے سے زیادہ میری ساری توجہ وکٹ حاصل کرنے پر ہوتی ہے۔ پہلے کون سا ڈیڑھ سو کی رفتار سے بولنگ کرتا تھا جو اب اسپیڈ کم ہوگئی،محمد عباس

 لاہور: فاسٹ بولر محمد عباس نے واضح کیا ہے کہ رفتار بڑھانے  سے زیادہ  میری ساری توجہ وکٹ حاصل کرنے پر ہوتی ہے۔

پی سی بی کی طرف سے جاری کردہ انٹرویو میں محمد عباس نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پہلے کون سا ڈیڑھ سو کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے بولنگ کرتا تھا جو اب کہا جارہاہےکہ اسپیڈ کم ہوئی ہے، ہمیشہ ایک سو تیس کے آس پاس بولنگ کرتا ہوں، جب وکٹیں مل رہی ہوتی ہیں تو باؤلر میں ایک انرجی آتی ہے اور پانچ چھ کلومیٹر رفتار میں اضافہ ہوجاتاہے۔ دس اوورز بعد بھی وکٹ نہ ملے تو پھرایساجسم تھکا تھکا لگنےلگتاہے۔محمد عباس کا کہنا تھا کہ کوشش ہوگی کہ جب بھی موقع ملے، پاکستان کے لیے بہترین کارکردگی دکھاؤں، سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے عباس نے  کاؤنٹی کرکٹ کھیلنے کو شاندار تجربہ قرار دیاہے۔ ان کا کہناہےکہ وکٹ حاصل کرنے کے لیے اسکلز کو مزید بہتر بنانے  کے ساتھ فٹنس میں بہتری کے لیے بھی کوشاں ہوں۔نیشنل ہائی کیمپ میں شامل دائیں ہاتھ کےپیسر نے  بتایا کہ انگلنیڈ سے واپسی پر ایک دم ٹھنڈے موسم سے لاہور کی گرمی میں  ایڈجسٹ ہونے میں کچھ وقت لگا، کاونٹی سےواپسی پر آرام نہیں کیا، سیدھا کیمپ  کو جوائن کیا۔ آگے بڑھنے میں  ٹریننگ کے ساتھ لیکچرز بھی اہمیت رکھتے ہیں۔

Muhammad Abbas (@muhamma20996837) | Twitter

Leave a Reply

Your email address will not be published.