سینیٹ کی سیٹ کا مسئلہ ایک علامت ہے یہ اصل بیماری یہ نہیں، تنظیم کو چلانے اور رابطہ کمیٹی کے حوالے سے اختلافات ہیں

جدت ویب ڈیسک ::میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ بہادرآباد کے ساتھ تنظیمی مسئلہ ہے جسے حل کرلیں گے، کل شام مثبت نتیجے پر پہنچنے کے بعد اپنی کوششیں کی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ سینیٹ کی سیٹ کا مسئلہ ایک علامت ہے یہ اصل بیماری یہ نہیں، تنظیم کو چلانے اور رابطہ کمیٹی کے حوالے سے اختلافات ہیں اب میڈیا میں بات آگئی ہے اس لیے مجھے کچھ نہیں چھپانا۔
ایم کیوایم کے رہنما کا کہنا تھا کہ ہم دوبارہ بیٹھیں گے اور بنیادی تنظیمی مسئلہ حل کریں گے، 2018 کے انتخابات میں پہلے سے زیادہ مضبوط مستحکم ایم کیوایم قائم کریں گے۔ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ متحدہ کے ایم پی ایز نے سی ایم ہاؤس میں ڈنر کیا لیکن انہیں وہ ہضم نہیں ہوا، ہمارے ایم پی ایز پارٹی کو جواب دہ ہیں، یہ مڈل کلاس کے ایم پی ہیں، ملک میں سردار اور جاگیرداروں کی سیاست ہے، پیسوں کی چمک ان پر اثر انداز نہیں ہوگی، آج ان کی آزمائش ہے۔فاروق ستار نے مزید کہا کہ میری ضد یا انا کسی حوالے سے نہیں، میری عملداری ہے، میری عزت اور احترام دل سے ہونا چاہیے، ایک بے اختیار اور با اختیار سربراہ میں فرق ہونا چاہیے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.