مشال خان قتل کیس کی سماعت،مزید پانچ گواہان کے بیانات قلم بند

ایبٹ آبادجدت ویب ڈیسک :: انسداد دہشت گردی کی عدالت میں مشال خان قتل کیس کی سماعت ہوئی جس میں مزید 5 گواہان کے بیانات قلم بند کیے گئے۔سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مشال کے والد نے کہا کہ بیٹے کے قتل کا کیس دنیا اور پاکستان کا سب سے اہم مقدمہ ہے، حساس کیس ہونے کے باوجود حکومت اس معاملے میں ساتھ نہیں دے رہی۔تفصیلات کے مطابق مردان کی باچا خان یونیورسٹی میں مشتعل طلباء کے ہاتھوں جاں بحق ہونے والے مشال خان کے قتل کی سماعت ہری پور سینٹرل جیل کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں ہوئی۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے سماعت کے دوران مزید 5 گواہان کے بیانات قلم بند کیے جس کے بعد اب تک مجموعی طور پر 11 گواہان نے اپنے عدالت میں اپنے بیانات جمع کروادیے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.