تمام آئینی اداروں کو پارلیمان کی عزت کرنا ہوگی،مر یم اورنگزیب

اسلام آبادجدت ویب ڈیسک وزیرمملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ پاکستان میں 18 وزرائے اعظم آئے، کوئی بھی اپنی مدت پوری نہیں کر سکا، تمام اداروں کو قانون و آئین کی پاسداری کرنا ہو گی۔ لوک ورثہ میوزیم میں تصویری نمائش کے افتتاح کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا آئین کو پڑھے بغیر حقوق اور فرائض سے آگاہی ممکن نہیں، پارلیمنٹ میں بیٹھے لوگ تمام اداروں کا احترام کرتے ہیں۔ مریم اورنگزیب نے کہا پارلیمان عوام کے 20 کروڑ ووٹ سے ان کی نمائندگی کرنے والا واحد ادارہ ہے، پارلیمنٹ کبھی مارشل لا کی نذر ہوئی۔ انہوں نے کہا پارلیمنٹ ملک کا سب سے زیادہ خود مختار ادارہ ہوتا ہے، 1999 کے بعد 9 سال آمریت رہی،ان 9 سالوں میں کیا ترقی ہوئی، پاکستان میں آمریت اور جمہوریت کا موازنہ کریں جواب خود مل جائے گا۔ جب پارلیمان میں لوگ موجود ہوں گے تب پاکستان کے لوگوں کے حقوق کی بات ہو گی۔وزیر مملکت نے مزید کہا پاکستان میں مینڈیٹ ملنے والے اوسطً پونے 2 سال اپنی مدت پوری کر سکے، 2013 میں ملک اندھیروں میں ڈوب رہا تھا، 18 گھنٹے لوڈشیڈنگ ہوتی تھی۔ انہوں نے کہا نوازشریف نے وعدہ کیا تھا 2018 میں پاکستان میں زیرو لوڈ شیڈنگ ہو گی، بھکی پاور پروجیکٹ دنیا میں کم ترین مدت میں مکمل ہونے والا پروجیکٹ ہے، پاکستان میں پہلی بار ایجوکیشن ریفارمز کی گئیں، ہر بچے کے لیے تعلیم کو مفت کیا گیا۔ انہوں نے کہا سی پیک مکمل ہونے کے ثمرات عوام کو ملیں گے، کسی منصوبے میں ایک روپے کی کرپشن کا بھی الزام نہیں ہے، موجودہ وزیراعظم پر بھی ایل این جی کے الزام لگے، پاکستان میں کم ترین ریٹ پر ایل این جی درآمد کی جا رہی ہے، الزامات اور حقیقت میں فرق الزام لگانے والے کو بھی سمجھنا چاہیے، عوام کے ووٹوں کی عزت ہر ادارے کا فرض ہے۔ وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ پارلیمنٹ ملک کا سب سے زیادہ خود مختار ادارہ ہوتا ہے لہذا تمام آئینی اداروں کو پارلیمان کی عزت کرنا ہوگی۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ہمیں بچوں میں قومی ترانے سے تعلق پیدا کرنا ہے، نئی نسل کو اسلاف کی کامیابیوں اور کارناموں سے روشناس کرانے اور نصاب میں اپنے تابناک ماضی کو اجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔ آئین کو پڑھے بغیر حقوق اور فرائض سے آگاہی ممکن نہیں جب کہ آئین سے دوری کی صورت میں عام آدمی کے حقوق کا تحفظ نہیں ہوسکتا۔مریم اورنگزیب نے کہا کہ جمہوریت کے تسلسل کے بغیر پاکستان ترقی نہیں کرسکتا، پاکستان میں عوام کی مرضی کو تحفظ دینے کی ضرورت ہے، عدم تحفظ سے لوگ بے یقینی کی صورتحال کا شکار رہتے ہیں۔ 70 سال میں کوئی بھی وزیراعظم اپنی مدت پوری نہیں کرسکا جب کہ ملکی تاریخ میں ایسا کیوں ہے کہ اسمبلیاں بار بار تحلیل کردی جاتی ہیں، آمریت کے دور میں خالی صفحات پر مشتمل اخبارات شائع ہوتے رہے تاہم تمام اداروں کو آئین اور قانون کی پاسداری کرنا ہوگی۔ پارلیمنٹ ملک کا سب سے زیادہ خود مختار ادارہ ہوتا ہے لہذا تمام آئینی اداروں کو پارلیمان کی عزت کرنا ہوگی کیونکہ پارلیمنٹ خود مختار ہوگی تو عوام کے حقوق کی بات ہوگی۔وزیر مملکت برائے اطلاعات نے کہا کہ نواز شریف نے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لیے عملی کام کیا، سی پیک کے ثمرات نوجوان نسل کو ملیں گے جب کہ 2013 میں دہشت گردی کے واقعات اوسطً ڈھائی ہزار سالانہ تھے، 4سال میں دہشت گردی کے واقعات میں 92 فیصد کمی ہوئی۔ نوازشریف کی قیادت میں مشکل ترین سفر کو مکمل کررہے ہیں، 4سال میں ملک میں بدعنوانی میں نمایاں کمی ہوئی جب کہ نوازشریف کے تمام ادوار میں ان پر کوئی بدعنوانی ثابت نہیں ہوئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.