پشاور میں این اے فورکا انتخابی معرکہ پاکستان تحریک انصاف کے نام بھاری اکثریت سے کامیابی

جدت ویب ڈیسک :پشاور میں این اے فورکا انتخابی معرکہ پاکستان تحریک انصاف کے نام رہا۔ پی ٹی آئی کے امیدوار ارباب عامر 45 ہزار 631 ووٹ لیکر 20 ہزار سے زائد ووٹوں کی بھاری اکثریت سے کامیاب قرار پائے جبکہ 24 ہزار 830 ووٹوں کے ساتھ دوسری پوزیشن عوامی نیشل پارٹی کے حصے میں آئی اور مسلم لیگ ن کے امیدوار ناصر موسٰی زئی 24 ہزار 790 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔  پاکستان تحریک انصاف نے ساڑھے 4 سال بعد پشاور میں اپنی مقبولیت بر قرار رکھی اور حلقہ این اے فور کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ ن ، جے یو آئی ف اور قومی وطن پارٹی اتحاد کے مشترکہ امیدوار ناصر موسٰی زئی کو شکست دے دی۔ جماعت اسلامی جن کا ماضی میں امیدوار بھاری اکثریت سے یہ حلقہ جیت چکا تھا اب وہ کارکرگی نہ دکھا سکی۔ اس حلقے کے نتائج جہاں پی ٹی آئی حکومت کی چار سالہ کارکردگی کے لئے لٹمس پیپر ثابت ہوئے وہاں اس سے اپوزیشن جماعتوں کی مقبولیت میں اضافے کے دعووں کی قلعی بھی کھل گئی۔عوامی نیشنل پارٹی نے عام انتخابات 2013 کی نسبت اپنا ووٹ بینک تو دگنا کر دیا تاہم مسلم لیگ ن حلقے میں گیس اور بجلی کے منصوبوں کے آغاز کے باوجود پی ٹی آئی کے مقابلہ نہ کر سکی۔ اس انتخاب میں مسلم لیگ ن سے بھی ذیادہ دھچکا پاکستان پیپلز پارٹی کو لگا۔ صوبے میں پی پی پی کے اندر موجود اندرونی چپقلش کے باعث پارٹی کا گراف بدستور نیچے آ گیا۔ پیپلز پارٹی کے اسد گلزار نے 13 ہزار 200 ووٹ حاصل کئے لیکن تحریک لبیک خود کو پی پی پی جتنی قوت منوانے میں کامیاب رہی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.