نواز شریف کی واپسی ،عمران نیازی ہی بتا سکتا ہے، سید خورشید شاہ

سکھر جدت ویب ڈیسک قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کو ملک دشمن کہنے والا عمران خانآج ان سے ووٹ مانگ رہا ہے ۔ ڈیل کے تحت نواز شریف کی واپسی کے بارے میں صرف عمران خان نیازی ہی بتا سکتا ہے چیئرمین نیب کے مسئلہ کا حل پارلیمنٹ میں موجود ہے اپوزیشن لیڈر ہٹانے کی روایت نئی ہے لیکن بطور اپوزیشن لیڈر چار سال ایمانداری سے کام کیا ہے ان خیالات کا اظہار قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے سکھر میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ ہی صرف جمہوریت کی مضبوطی کی علامت ہے اور اگر چیئرمین نیب پر کوئی مسئلہ ہے تو اس مسئلے کا حل بھی پارلیمنٹ میں موجود ہے پارلیمنٹ میں اس حوالے سے 12 رکنی کمیٹی موجود ہے جس میں 8 قومی اسمبلی اور 4 سینٹ کے اراکین ہوتے ہیں اور یہ 12 رکنی کمیٹی میں 6 اراکین حکومتی اور 6 اراکین اپوزیشن کے برابر ہوتے ہیں پھر وہاں پر ووتنگ کی جاتی ہے اگر نتیجہ برابر نکلے تو پھر مسئلہ کو الیکشن کمیشن بھیجا جاتا ہے اور وہاں بھی حل نہ ہو تو پھر سپریم کورٹ فیصلہ کرتا ہے ۔ خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے کبھی بھی بددیانتی نہیں کی ہے اپوزیشن لیڈر کو ہٹانے کی روایت نئی ہے اور مجھے اس پر کوئی گلہ شکوہ نہیں ہے لیکن چار سال تک بطور اپوزیشن لیڈر ایمانداری سے کام کیا ہے اور اپنی ذمہ داریاں نبھائی ہیں انہوں نے کہا کہ سیاستدانوں کے قول اور فعل میں تضاد نہیں ہونا چاہئے ورنہ وہ قوم کو کیسے لیڈ کرے گا اور میں نے میڈیا پر کہا تھا کہ نواز شریف کو ملک واپس آ کر کیسز کا سامنا کرنا چاہئے اگر نواز شریف کی کوئی ڈیل ہوئی ہے تو اس بارے مجھے معلوم نہیں لیکن عمران خان ضرور بتا سکتے ہیں ایک سوال کے جواب میں خورشید شاہ نے کہا کہ عمران خان پہلے کراچی والوں کی دل آزادی کی معافی مانگیں کیونکہ میڈیا پر ریکارڈ موجود ہے جب انہوں نے کراچی کے لوگوں کو الطاف کی تقریر سننے پر بھیڑ بکریاں بنایا تھا اور ایم کیو ایم کو ملک دشمن قرار دیا تھا آج وہی عمران اپنا تھوکا ہوا چاٹ رہا ہے اور اسی ایم کیو ایم کے پاس ووٹ مانگنے جا رہا ہے ان کے پاس سسٹم تباہ کرنے کے علاوہ کوئی دوسرا ایجنڈا نہیں ہے لیکن پیپلزپارٹی کے پاس جمہوریت کے تسلسل اور ملک کو آگے بڑھانے کا ایجنڈا موجود ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.