امریکی پالیسی پر حکومت کودوٹوک جواب دینا چاہیے خطے میں عدم توازن کی کیفیت قائم ہو گئی

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک :: قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید نے کہا ہے کہ امریکی پالیسی سے ہمیں نقصان ہی ہوا ہے اور خطے میں عدم توازن کی کیفیت قائم ہو گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ کو امریکی معاملے میں جس طرح کا ردعمل دینا چاہیے تھا ویسا نہیں دیا گیا اب ہمیں ان معذرت خواہانہ رویوں سے اجتناب برتنا ہوگا۔ خورشید شاہ نے کہا کہ حکومت کو واضح خارجہ پالیسی بنانے کی ضرورت ہے جس کا اولین مقصد پاکستان کا مفاد و سلامتی ہو اور بھارت کو دوٹوک جواب دیتی ہو۔۔۔۔قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کے پیچھے بھارت کا ہاتھ ہے جس کا ثبوت کلبھوشن یادیو نیٹ ورک کا پکڑا جانا ہے۔وہ قومی اسمبلی میں گفتگو کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ امریکی پالیسی کی بدولت ہم نے بہت نقصان اٹھایا ہے اور دہشت گردی کے کلبھوشن نیٹ ورک پکڑا گیا۔خورشید شاہ نے کہا کہ امریکا کی جانب سے بھارت کو آشیر باد دی جارہی ہے امریکی پالیسی کے بعد وزیر خارجہ ایک لفظ نہیں بول پائے اس معاملے پر ہم ہی جرات مندی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.