حکومت نواز شریف کے مشن کو پورا کریگی ‘خواجہ آصف

سیالکوٹ جدت ویب ڈیسک وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے کہاہے کہ موجودہ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کریگی، وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی بطور نامزدگی مسلم لیگ ن کے قائد محمد نواز شریف اور ان کے رفقائ کارکی اچھی اور بہترین سوچ تھی ، موجودہ حکومت نواز شریف کے مشن کو پورا کریگی ، افغانستان سے دوستانہ تعلقات ہماری خواہش سے استوار نہیں ہوسکتے اس کےلئے باقاعدہ طور پر افغانستان کو لائحہ عمل مرتب کرنا ہوگا جلد پاکستان دہشت گردوں کے چنگل سے آزاد ہو جائےگا۔ وہ اتوار کو مسلم لیگ ہائوس واقع پیرس روڈ پر کھلی کچہری سے خطاب کررہے تھے ۔خواجہ آصف نے کہا کہ اب ہم نے اپنے ملک کومعاشی و معاشرتی طور پر مظبوط بنانا ہے جبکہ ملک کی ایسی خارجہ پالیسی تیار کر نی ہے جس سے پاکستان کے تعلقات دوسرے ملکوں سے مضبوط ہوں گے اور پاکستان ایک بہتر مقام بنا سکے گا۔انھوں نے کہا کہ بھارت سرحدوں پرپر چھیڑ خانی کرکے انتشار پھیلا نے کی بھر پور کوشش کر تا ہے جو دونوں ممالک کےلئے اچھا شگون نہ ہے اور ہم بھارت کےساتھ اچھے تعلقات بنانے کے خواہاں ہیں۔انھوں نے کہا کہ ہم بھارت کے ساتھ حالات معمول پر لانا چاہتے ہیں تاہم بھارت ایسا نہ چاہتا ہے جبکہ بھارت مسلسل جنگ بند ی معاہدے کی خلاف ورزی کررہا ہے۔انھوں نے کہا کہ مغربی سرحد پر بھی بھارت حالات خراب کر کے خوف وہراس پھیلانے کے درپے ہے جو دونوں ممالک کےلئے کوئی اچھی بات نہ ہے۔انھوں نے کہا کہ افغانستان سے دوستانہ تعلقات ہماری خواہش سے استوار نہیں ہوسکتے اس کےلئے باقاعدہ طور پر افغانستان کو لائحہ عمل مرتب کرنا ہوگا کیونکہ پاکستان تو چاہتا ہے کہ ہمارے پاکستان سے تعلقات بہتر سے بہتر ہو ں اور اس کے لئے افغانستان کو بھی آگے بڑھنا ہو گا۔انھوں نے کہا کہ سندھ طاس خطرات سے دوچار ہے اور اس سے بر صغیر کو گزشتہ 57سے خطرہ ہے اور اس کی وجہ سے دشواریاں پیش آرہی ہیںاور اس معاہد ہ پر بھارت اور دیگر ممالک بالخصوص امریکہ اثر انداز ہو رہا ہے اور عالمی بینک اس معاہدہ میں ضامن ہے اور اس معاہد ہ کے معاملہ کو بنک کے سامنے پیش کیا ہے اور اب عالمی بینک ہی اس کو حل کرائےگا۔انھوںنے کہاکہ کشن گنگا معاملہ ڈیڑھ سال پہلے حل ہو چکا تھا اور بھارت نے تین بار اس کی فلنگ کرکے زیادتی کی اور اب یہ معاملہ بھی ناقابل برداشت ہوچکا ہے اور سندھ طاس و کشن گنگا کے معاہدوں کو حل کروانے کےلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔انھوں نے کہا کہ ریتلے ہائیڈرو پراجیکٹ اور کشن معاہد ہ علیحدہ علیحدہ معاملات ہیں اور ان کو حل کرانے کا وقت آچکا ہے اور جس بھی پلیٹ فارم پر اس کےلئے آواز اُٹھانا پڑی اُٹھا کر دم لیں گے۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کئی دہائیوں سے دہشت گردی کا مقابلہ کر رہا ہے اور میاں نواز شریف کی مثبت پالیسیوں اور پاکستانی فوج کی کوششوں و بہتر پالیسی کی وجہ سے اس پر قابو پانے کافی حد تک مدد ملی ہے اور جلد پاکستان دہشتگردوں کے چُنگل سے آزاد ہو جائےگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.