ملزم احد چیمہ اور شاہد شفیق کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

لاہور جدت ویب ڈیسک :: احتساب عدالت نے آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل میں گرفتار ملزم سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ اور شاہد شفیق کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔
تفصیلات کے مطابق لاہورکی احتساب عدالت میں آشیانہ اقبال ہاوسنگ اسکیم ریفرنس پرسماعت ہوئی جہاں آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل میں گرفتار ملزم سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ اور شاہد شفیق کو پیش کیا گیا۔قومی احتساب بیورو کے وکیل نے کہا کہ تفتیش جاری ہے کہیں پیراگون سٹی نے بھی فائلیں فروخت نہ کی ہوں، پی ایل ڈی سی کے 3 سال میں 17 چیف ایگزیکٹو تبدیل کیے گئے، تمام سی ای اوز کو صرف ٹھیکا چلتا رہنےکے لیےتبدیل کیا گیا۔نیب کے وکیل نے کہا کہ احد چیمہ کے 2 موبائل، لیپ ٹاپ اور دیگر فائلیں تحویل میں لے لی ہیں، ملزم شاہد شفیق نےجعلی دستاویزات پرٹھیکا حاصل کیا، ٹھیکا لیتے وقت اسپارکو کو مرکزی کمپنی ظاہر کیا گیا۔قومی احتساب بیورو کے وکیل نے کہا کہ ٹھیکا لیتے وقت تینوں کمپنیوں کا حصہ ظاہر نہیں کیا گیا، بعد میں شاہد شفیق نے خود کو90 اوردیگر2 کمپنیوں کو10 فیصد کاحصہ دیا۔نیب کے وکیل کی جانب سے آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل میں گرفتار ملزم سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ اور شاہد شفیق کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی درخواست پرعدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیاعدالت میں نیب کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ احد چیمہ اورخاندان نے 32 کنال اراضی اپنے نام منتقل کرائی، کروڑوں کی زمین کے عوض احد چیمہ نے 25 لاکھ ادا کیے، باقی رقم پیراگون سٹی کے اکاؤنٹ سے ٹرانسفر کی گئی۔نیب کے وکیل نے کہا کہ ساڑھے 19 کنال مزید زمین بہن اورکزن کے نام منتقل ہوئی، 3 بار نوٹس دیے، احد چیمہ کی بہن اوردیگر افراد شامل تفتیش نہیں ہورہے، آشیانہ اقبال پیراگون سٹی سےملحق سوسائٹی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.