مصری فٹ بالر داعش سے تعلق کےالزام میں گرفتار

قاہرہ جدت ویب ڈیسک : مصری پولیس نے شدت پسند تنظیم داعش سے تعلق کے الزام میں ایک مشہور فٹ بال کھلاڑی حمادالسید کو گرفتار کر لیا ہےحمادالسید ملک کی حساس تنصیبات اور سکیورٹی فورسز پر خونی حملوں میں ملوث رہے ہیں،مصری پراسیکیوٹر کے الزامات غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق اسوان فٹ بال کلب کے کھلاڑی حماد السید کو سپریم سیکیورٹی پراسیکیوٹر نے پندرہ روز کے لیے پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے۔ حماد السید پر جزیرہ نما سیناءمیں شدت پسند گروپ ’داعش‘ کے ساتھ وابستگی کا الزام عائد کیا گیا ہے۔مصری پراسیکیوٹر کی طرف سے عائد کردہ الزامات کی چارج شیٹ میں کہ کہا گیا ہے کہ حماد السید ملک میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں سرگرم دہشت گردوں میں شامل جو ملک کی حساس تنصیبات اور سکیورٹی فورسز پر خونی حملوں میں ملوث رہے ہیں۔ اسوان سپورٹس کلب کے چیئرمین حسن عبدالقادر نے چند روز قبل ایک بیان میں کہا تھا کہ کلب کا ایک رکن اور سینیر کھلاڑی حماد السید پراسرار طور پر غائب ہے۔ اس کے بعد اس کا کوئی پتا نہیں چل سکا ہے۔سلوان کلب کی انتظامی کونسل کے رکن مصطفیٰ امین نے انکشاف کیا ہے کہ فٹ بالر حماد السید کو سکیورٹی فورسز نے گرفتار کیا ہے۔ اس پر جزیرہ نما سیناءمیں دہشت گردی کی کارروائیوں میں معاونت کا الزام عاید کیا گیا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published.