دہری شہریت پر الیکشن کمیشن نے کوئی جھوٹ نہیں بولا ،امیدوار دہری شہریت کو سرنڈر کر چکے تھے

جدت ویب ڈیسک :: میڈیا کو جاری کردہ بیان میں ترجمان الیکشن کمیشن نے کہا کہ سینیٹ امیدواروں کے لیے سکروٹنی کا وقت رات 12 بجے تک بڑھایا گیا ۔ ریٹرننگ افسران نے لسٹ دیکھی ، اس میں یہ امیدوار دہری شہریت کو سرنڈر کر چکے تھے ۔ امیدواروں کے سرنڈر کے جوابی بیان حلفی بھی لگے ہوئے تھے جو وزارت داخلہ سے لسٹ کے ساتھ موصول ہوئی تھی ۔ اس کے بعد ریٹرننگ آفیسران نے اس کے مطابق ان کو سکروٹنی میں کلئیر کر دیا ۔ اس کے علاوہ اپیلٹ ٹریبونل موجود تھی جو ہائی کورٹ کے جج پر مشتمل تھی ۔ ٹرائیبونل سے بھی امیدوار کلئیر قرار پائے گئے،ا لیکشن کمیشن نے کہا کہ دہری شہریت پر الیکشن کمیشن اف پاکستان نے کوئی جھوٹ نہیں بولا ۔ متعلقہ لسٹ جیسے ہی وزارت داخلہ سے موصول ہوئی تمام رٹرننگ افسران کو شام 4 بجے دے دی گئی تھی ۔ لسٹ میں امیدوار دہری شہریت کو سرنڈر کر چکے تھے ۔ ٹرائیبونل سے بھی امیدوار کلئیر قرار پائے گئے ۔ کسی نے بھی اس فورم پر اعتراض بھی نہیں کیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.