Chief Minister sindh

کے ایم سی کو فنڈز دیدیئے‘ کام دکھائی نہیں دے رہا‘ وزیراعلیٰ سندھ

کراچی جدت ویب ڈیسک وزیراعلی سندھ سیدمراد علی شاہ نے کہاہے کہ کراچی میں دہشت گردی کی حالیہ وارداتوں میں ملوث بعض ملزمان پکڑے گئے ہیں، باقی ماندہ دہشت گروں کو بھی جلدپکڑلیں گے، دہشت گرد قانون نافذ کرنےوالے اداروں کامورال کم کرناچاہتے ہیں۔پولیس ٹارگٹ کلنگ پر کام کررہے ہیں، کل بھی ایک گینگ کو ختم کیا ہے۔وزیراعلی سندھ نے اتوارکوشہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا اورشہر میں کے ایم سی کے تحت جاری پروجیکٹس کا جائزہ لیا۔وزیر اعلی سندھ کے ہمراہ وزیربلدیات سندھ جام خان شورو،چیئرمین پی اینڈ ڈی محمد وسیم اور دیگراعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ دورے کے دوران وزیر اعلی سندھ نے مختلف تعمیراتی سڑکوں، انڈر پاسز اور فلائی اوور کا جائزہ لیا۔وزیر اعلی نے ملیر روڈ کو جلد مکمل کرنے کی ہدایت کردی جبکہ منزل پمپ پر ٹھٹھہ جانے والے روڈ پر جاری کام میں سست روی پر محکمہ ورکس پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جب دورے پر نکلتا ہوں تب ہی کام ہوتا ہے۔ سست روی کیوں دکھائی جاتی ہے؟اس روڈ کے ساتھ فٹ پاتھ بھی بنانا چاہیے تھا ۔اس موقع پرمیڈیا سے گفتگو میں وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہاکہ ائیرپورٹ سے قائد آباد تک کے ایم سی کے تحت کام کو دیکھنے آیا تھا، ائیرپورٹ سے قائدآباد تک روڈ کا کام کاغذات میں مکمل ہوگیا ہے مگر عملی طور پر نہیں ہوا جبکہ کے ایم سی کو منصوبے کے تمام فنڈز جاری کردیئے گئے تھے۔ انہوںنے کہا کہ منزل پمپ فلائی اوور پر کام سے مطمئن ہوں اور فلائی اوور کا این ای ڈی یونیورسٹی کے ماہرین سے معائنہ کرایا ہے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ترقیاتی کاموں کی رفتار سے مطمئن نہیں ہوں لہٰذا چاہوں گا کہ کے ایم سی کاموں کے معیار پر توجہ دے۔سید مراد علی شاہ نے کہاکہ شہر میں پولیس کی ٹارگٹ کلنگ پر افسوس ہے، ٹارگٹ کلنگ میں ملوث دہشت گردوں کی نشاندہی ہوگئی ہے اور حالیہ قتل کے واقعات میں ملوث ایک گینگ کو پکڑا بھی ہے جبکہ باقی دہشت گردوں تک بھی جلد پہنچیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.