اس سال گورنمنٹ حج اسکیم کے لئے بینکوں نے تین لاکھ سے زائد ایپلی کیشنز حاصل کی ہیں

جدت ویب ڈیسک ::وفاقی وزیر برائے مذہبی امور سردار محمد یوسف نے بتایا ہے کہ اس سال حکومت حج کے لیے تین لاکھ سے زائد ہزار (375،000) ایپلی کیشنز وصول کی ہیں. جس میں سے ایک لاکھ (120،000لوگ حج کا ارادہ رکھتا ہے سعودی عرب کو بھیجا جائے گا. اس وجہ سے پچھلے سال سعودی عرب میں حج کی حاجیوں کے لئے پاکستان نے شاندار انتظامات کیے ہیں، اس سال شہریوں نے سرکاری حج منصوبے کے تحت درخواستوں کی ریکارڈ نمبر درج کی.اڈیالہ روڈ میں مذہبی امور وفاقی وزیر نے یہ بات جامعہ مسجد فاطمہ الزہرہ کی افتتاحی تقریب کے دوران یہ بتائی.انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے حجاج حاجیوں کی سہولت کے لئے پالیسی بنائی ہے. ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ چھ ہزار ہزار (65،000) حجاج حاجیوں کے کوٹ نجی حج کے منتظمین کو دیئے جائیں گے تاکہ وہ نجی حج منصوبے کے تحت سعودی عرب کو حراستی حاجیوں کو بھی بھیج سکے.سردار یوسف نے کہا کہ حکومت نے حج منصوبے 2018 کے لئے ایک شفاف پالیسی اختیار کی ہے اور ایک بہترین پالیسی بنا دی گئی ہے. انہوں نے مزید کہا کہ اس سلسلے میں مختلف وفاقی کابینہ کی منظور شدہ کمیٹی تشکیل دی گئی ہیں.وزیر نے اظہار کیا کہ امید ہے کہ سپریم کورٹ جلد ہی حج کوٹ کے معاملے پر فیصلہ کرے گی.انہوں نے بتایا کہ حکومت مساجد امام کی طرف سے تجربے کو حل کرنے کی کوشش کر رہی ہے.ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کیلئے یونیفارم کی نماز کا وقت مقرر کیا گیا ہے لیکن یہ مکمل طور پر نافذ نہیں کیا جاسکتا ہے اور مرکزی سطح پر قومی علماء اور مشھد کونسل بنایا گیا تھا جس میں امام مسعود کے مسائل کو حل کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا.انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی دارالحکومت میں شہری نمازی وقت کے عمل کے عمل کے لئے شہریوں کی خاص طور پر تاجروں اور سول سوسائٹی کی ضرورت ہوگی.سردار یوسف نے مزید کہا کہ ہم سعودی عرب میں سعودی عرب میں شاندار سہولیات فراہم کرنے کے لئے اپنی پوری کوشش کررہے ہیں اور گزشتہ سال کی طرح بہترین انتظامات کیے جائیں گے.انہوں نے مزید کہا کہ اس سال کے ایپلی کیشنز کی ریکارڈ توڑنے والی نشاندہی سے پتہ چلتا ہے کہ لوگ  حج کی منصوبہ بندی سے  مطمئن ہے.

Leave a Reply

Your email address will not be published.