اعتزاز احسن اڈیالہ جیل آکر نوازشریف سے اپنے الفاظ کی معافی مانگیں، اے پی سی میں شریک کئی جماعتیں صدارتی امیدوار کے لیے متفق ہونے میں ہچکچا ہٹ کا شکار

جدت ویب ڈیسک ::کشمیرپوائنٹ مری میں نوازشریف کی رہائش گاہ پرہونے والی اے پی سی میں مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی، ایم ایم اے اوراے این پی سمیت دیگرجماعتیں شریک ہیں، اے پی سی میں مسلم لیگ (ن) کے سردار ایاز صادق، مریم اورنگزیب، احسن اقبال جبکہ پیپلز پارٹی کے خورشید شاہ، راجہ پرویز اشرف، شیری رحمان، نوید قمر اور قمر زمان کائرہ شامل ہیں، اے این پی کے غلام احمد بلوراور نیشنل پارٹی کے حاصل بزنجو کے علاوہ پاک سرزمین پارٹی اور قومی وطن پارٹی کے رہنما بھی اے پی سی میں شریک ہیں۔پشتونخواملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی اے پی سی میں شریک نہیں ہیں تاہم ٹیلی فونک رابطوں میں انہوں نے اے پی سی کے فیصلوں کو تسلیم کرنے کے موقف سے آگاہ کردیا ہے۔اے پی سی میں پیپلز پارٹی کا وفد صدارتی امیدوار کے لئے اعتزاز احسن کے نام پر دیگر شرکاء کو قائل کرنے کی کوششیں کررہا ہے تاہم مسلم لیگ (ن) اور دیگر اپوزیشن جماعتیں اس پر رضامندی میں ہچکچاہٹ کا شکار کررہی ہیں۔اجلاس میں اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف پارلیمان کے اندر اور باہر احتجاج کی حکمت عملی پر غور کیا جارہا ہے۔
واضح رہے کہ 4 ستمبر کو سینیٹ اور قومی و صوبائی اسمبلیوں میں صدارتی انتخاب کے لئے پولنگ ہوگی۔ جس کے لئے پاکستان تحریک انصاف نے عارف علوی جب کہ پیپلزپارٹی نے اعتزاز احسن کو امیدوار نامزد کیا ہے۔
مسلم لیگ (ن) کے رہنما پرویز رشید کا کہنا ہے کہ اعتزاز احسن اڈیالہ جیل آکر نوازشریف سے اپنے الفاظ کی معافی مانگیں تو صدارتی امیدوار کے لیے ان کے نام پر غور کریں گے۔اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اطلاعات پرویز رشید کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ نے ابھی تک صدارتی امیدوار کا فیصلہ نہیں کیا۔پرویز رشید کا پیپلزپارٹی کی جانب سے صدارتی امیدوار کیلیے نامزد اعتزاز احسن کی حمایت کے حوالے سے کہنا تھا کہ اعتزاز احسن اڈیالہ جیل آکر نوازشریف سے اپنے الفاظ کی معافی مانگیں تو غور کرینگے۔، اتحادی جماعتوں سے مشاورت جاری ہے اور اپوزیشن ایک نام پر رضامند ہو جائے تو اچھا ہےصحافی کے سوال پر کہ چوہدری نثار نے نوازشریف سے ملاقات کی کوشش کی لیکن نوازشریف نے کیوں انکار کیا، پرویز رشید نے کہا کہ نوازشریف سے ملاقات کی کوشش کے بارے میں چوہدری نثار خود ہی بتا سکتے ہیں تاہم انتخابی نتائج میں عوام نے چوہدری نثار کو رد کردیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.