قطری نظام دہشت گردی کا سہولت کار ہے، امریکا

واشنگٹن جدت ویب ڈیسک امریکی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ قطر میں دہشت گردی کی مالی معاونت کرنے والے عناصر اب بھی قطر کے مالیاتی نظام سے مستفید ہو رہے رہے ہیں۔ امریکی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ برائے 2016ئ میں کہا گیا ہے کہ قطر دہشت گردی کے حوالے سے دوغلی پالیسی پرعمل پیرا ہے۔ ایک طرف وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لے امریکا سے معاہدے کرتا ہے مگر قطر کے دہشت گرد تنظیموں کے معاونت کار دہشت گردی کی مدد کے لیے قطر کے سرکاری مالیاتی نظام کو استعمال کررہے ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ داعش اور القاعدہ کے ساتھ ساتھ ایران کی حمایت یافتہ تنظیموں بالخصوص حزب اللہ امریکا کی سلامتی کے لیے پہلا خطرہ ہیں۔رپورٹ میں الزام عاید کیا گیا ہے کہ ایران سنہ 2016ئ میں پاسداران انقلاب کی مدد سے عراق میں الحشد الشعبی، یمن میں حوثیوں اور شام میں حزب اللہ کی مالی مدد کرتا رہا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شام میں اسد رجیم کو مستحکم کرنے اور عوام کے خلاف اس کے جنگی جرائم میں حزب اللہ کا کلیدی کردار ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سعودی عرب اور امریکا مل کر کام کررہے ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ریاض نے تمام شعبوں میں بھرپور کردار ادا کیا ہے۔رپورٹ کے مطابق سعودی عرب دہشت گردی اور داعش کے خلاف جنگ کے لیے امریکا اور اٹلی کی قیادت میں تشکیل کردہ عالمی فوجی اتحاد کا حصہ رہے گا، امریکا اور سعودی عرب مل کر دہشت گردی کی مالی معاونت روکنے کے لیے ہر سطح پر کوششیں جاری رکھیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.