ایران کی امریکا کو کھلی دھمکی ، سب حیران

نیویارک جدت ویب ڈیسک ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے امریکی صدر کو خبردار کیا ہے کہ امریکا نے ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی جاری رکھی تو ایران مشترکہ ایکشن پلان سے دستبردار ہو سکتا ہے۔ایرانی خبر رساں ادارے کے مطابق ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے نے امریکی جریدے نیشنل انٹرسٹ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر امریکا نے ایٹمی معاہدے کی ایسی خلاف ورزی کی کہ جس سے یہ معاہدہ متاثر ہوسکتا ہے تو ایران مشترکہ ایکشن پلان سے دستبردار جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ایران نے ایٹمی معاہدے پر مکمل طور پر عمل کیا ہے۔داسری جانب ایران کے وزیر خارجہ نے امریکی خارجہ تعلقات کونسل کے تھنک ٹینک کے خصوصی اجلاس میں امریکی حکام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ امریکیوں کو چاہئے کہ مداخلت پر مبنی اپنے بیانات سے باہر نکل کر اس حقیقت کو جان لیں کہ ایران کے خلاف پابندیاں لگانے یا نظام بدلنے کی پالیسیوں سے کچھ حاصل نہیں ہو گا۔انہوں نے ایران کے پر امن جوہری پروگرام کے خلاف امریکی پابندیوں کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکا کو چاہیے کہ وہ اس قسم کی پابندیوں کے بارے میں اپنی پالیسی کو تبدیل کرے۔انھوں نے کہا کہ امریکہ نے جب ایران کے پرامن جوہری پروگرام کے خلاف پابندیاں عائد کیں تو اس وقت ایران کے پاس صرف 200 سینٹری فیوج مشینیں تھیں لیکن پابندیوں کے بعد ان کی تعداد 20 ہزار ہو گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.