وقت ایک سا نہیں رہتا دن رات عمران خان پر بھڑکیں مارنے والے آج سابق ہوگئے دلچسپ تحریر پڑھیے

جدت ویب ڈیسک :روز شام کو یو ں لگتا ہے کہ اب تو عمران خان اس قوم سے مایوس ہو ہی جاے گا لیکن پھر اگلی صبح اس
کی وہی مسکراہٹ وہی حوصلہ وہی لگن پاگل ہے اور پاگل کر دیتا ہے
عمران خان تو تیری مسکراہٹ سلامت رہے وقت کی فرعونوں کو شکست دینا ناممکن تھا اور اج اپ نے ناممکن کو ممکن کردیکھایا
اے عمران خان تجھے کونسی دعا دوں . ۔۔۔۔بس اگر تیری عمر کم پڑے اللہ میری عمر دے تمکو،،، · پانامہ لیکس کے فوری بعد برطانوی وزیراعظم نے تمام ریکارڈ پارلیمنٹ کے سامنے رکھ دیا اور اپنی پوزیشن کلئیر کرلی۔آئیس لینڈ کے وزیراعظم کے گھر کے سامنے عوام نے احتجاج کیا تو اس نے فوری طور پر استعفی دے دیا۔ پھر اس نے عوام کے سامنے اپنی پوزیشن کلئیر کی، چھ ماہ بعد دوبارہ الیکشنز ہوئے تو وہ ایک مرتبہ پھر وزیراعظم منتخب ہوگیا۔نوازشریف کا نام بھی پانامہ میں آیا۔ اسے مشورہ دیا گیا کہ استعفی دے کر اپنی پوزیشن کلئیر کرے۔ اس نے اسمبلی میں کھڑے ہوکر جھوٹے ثبوت پیش کردیئے۔ اپوزیشن نے اسے ایک موقع اور دیا کہ ان کے تجویز کردہ ٹرمز آف ریفرینس پر جوڈیشل کمینش بنالے لیکن وہ نہ مانا۔ حالانکہ جوڈیشل کمیشن جے آئی ٹی کی طرح تحقیقات نہیں کرسکتا تھا۔ پھر عمران خان نے سڑکوں پر نکل کر دباؤ ڈالا تو سپریم کورٹ نے سماعت شروع کردی۔ اس وقت بھی نوازشریف کو مشورہ دیا کہ استعفی دے دو، عوام تمہیں دوبارہ منتخب کرلے گی لیکن وہ نہ مانا۔پھر سپریم کورٹ نے فیصلہ سنایا، دو ججوں نے نااہل اور 3 ججوں نے جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا کہا۔ اس وقت بھی سمجھدار لوگوں نے اسے کہا کہ استعفی دے دو، معاملہ ٹل جائے گا لیکن وہ نہ مانا۔پھر جے آئی ٹی کی رپورٹ آگئی جس میں پورے ٹبر کو چور ثابت کردیا گیا۔ ایک مرتبہ پھر نوازشریف کے پاس موقع تھا کہ وہ استعفی دے کر اخلاقی فتح حاصل کرلیتا لیکن اس نے کھوتے کی طرح ہُوڑ مت ہی دکھائی۔آج سپریم کورٹ نے اسے تاحیات نااہل قرار دے دیا جس کی وجہ سے وہ نہ صرف مستقل طور پر سیاست سے باہر ہوگیا بلکہ اپنی پارٹی کی صدارت بھی گنوا بیٹھا، اور اب وہ اپنی ہی پارٹی کا ممبر بھی نہیں بن سکتا۔کہتے ہیں کہ جب ہلاکت کا فیصلہ ہوجائے تو سب سے پہلے عقل گھاس چرنے چلی جاتی ہے، نوازشریف کے ساتھ بھی یہی کچھ ہوا

Leave a Reply

Your email address will not be published.