نیشنل بینک کے صدر سعید احمد عادی مجرم نکلے

کراچی جدت ویب ڈیسک ؛نیشنل بینک کے صدر سعید احمد عادی مجرم نکلے،اسحاق ڈار نے دوستی نبھانے کے چکر میں بین الاقوامی سزائ یافتہ مجرم سعید احمد کے ہاتھ میں قومی خزانہ کی چابی تھمادی‘ جاوید کیانی نے جے آئی ٹی میں سب کچھ اگل گیا،وزیراعظم ہائو س کے منی لانڈرنگ کیلئے استعمال کا بھی انکشاف‘ جاوید کیانی کی سعید احمد کیخلاف سلطانی گواہ بننے کی پیشکش ‘سیاسی حلقوں میں کھلبلی کی اصل وجہ سامنے آگئی،ملک میںسابقہ روایات کے مطابق چن کر کرپٹ شخص کو نیشنل بینک صدر بنایا گیا‘برطانیہ میں نرسنگ ہوم چلانے والے سعید احمد کو پہلے گورنر اسٹیٹ بینک بھی بنایا جاچکا ہے۔تفصیلات کے مطابق نیشنل بینک کے صدر سعید احمد نے پانامہ کیس کی جے آئی ٹی میں منی لانڈرنگ کے حوالے سے سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں اور وفاقی حکومت کی بوکھلاہٹ کی اصل وجہ بھی یہی بتائی جارہی ہے ۔ نیشنل بینک کے صدر نے جے آئی ٹی میں اعتراف کیا کہ برطانیہ میں نرسنگ ہوم چلانے والے سعیداحمد کو سعودی عرب میں دوران ملازمت کرپشن کے الزام میں ادارے نے جیل بھجوادیا تھا تاہم وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے کلاس فیلو ہونے کی وجہ سے وفاقی وزیرخزانہ سے سعید احمد جیسے عادی مجرم کو پہلے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا ڈپٹی گورنر اور بعد ازاں نیشنل بینک کا صدر بنادیا یہاں دلچسپ بات یہ ہے کہ نیشنل بینک کے بیشتر صدر پر کرپشن کے الزامات لگ چکے ہیں تو یہاں یہ کہنا بے جا نہ ہوگا کہ نیشنل بینک کا صدر بننے کیلئے سب سے بڑی کوالیفکیشن کرپشن ہے جبکہ نجی ٹی وی کے مطابق شوگر مل کے مالک جاوید کیانی نے اپنے ماموں سعید احمد کے کہنے پر منی لانڈرنگ کیلئے جعلی اکائونٹ کھولے جاوید کیانی نے جے آئی ٹی کو منی لانڈرنگ کے حوالے سے سعید احمد کیخلاف سلطانی گواہ بننے کی پیشکش بھی کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.