Lahore High Court Agha Nasir Abbas Shirazi

ناصرعباس شیرازی کی عدم بازیابی‘لاہورہائی کورٹ برہم

لاہور جدت ویب ڈیسک لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس قاضی امین کا عدالتی احکامات کے باوجود متحدہ مجلس مسلمین کے لا پتہ رہنما ناصر عباس کو بازیاب کرا کے پیش نہ کرنے پر اظہاربرہمی، فاضل جج نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ اربوں روپے کے سی سی ٹی وی کیمروں کا کیا فائدہ ہواجس میں کوئی چیز دکھائی نہیں دیتی، ناصر عباس شیرازی کے بھائی علی عباس نے عدالت کو بتایا کہ ایلیٹ فورس کی گاڑی میں چار مسلح نوجوان بھائی ناصر عباس شیرازی کو اٹھا کر لے گئے،ناصر عباس نے رانا ثنااللہ کی جانب سے جسٹس باقر نجی کے بارے میں متنازعہ بیان دینے پر انکی نا اہلی کے لیے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا، انہوں نے استدعا کی کہ عدالت ان کے بھائی کی بازیابی کا حکم دے، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شان گل نے پولیس کی جانب سے عدالت کو بتایا کہ ناصر عباس کی بازیابی کے لئے پولیس نے مشتبہ جگہوں پر چھاپے مارے مگر کامیابی نہیں ہوئی، انہوں نے بازیابی کیلئے 15 روز کی مہلت طلب کی جسے عدالت نے مسترد کر دیا، عدالت نے پولیس افسران کو کسی دباﺅ کے بغیر تفتیش جاری رکھنے اور عدالتی احکامات پر عمل درآمد کرنے کا حکم دیتے ہوئے کارکردگی رپورٹ طلب کر لی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.