Pakistan Christian Professionals And Businessman Association

ملکی ترقی میں مسیحیوں کا کردارناقابل فراموش ہے‘ عرفان اللہ مروت

کراچی جدت ویب ڈیسک پاکستان کرسچن پروفیشنلز اینڈبزنس مین ایسوسی کی پہلی سالگرہ پر ایک پروقار تقریب کااہتمام کیا گیا جس میں سیاسی رہنمائوںوزندگی کے مختلف شعبہ جات کے نامور افراد نے شرکت کی ، تقریب میں سینئرسیاستدان عرفان اللہ خان مروت اور ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے روبن یامین نے بطور مہمانان خصوصی شرکت کی۔اس موقع پر چیئرمین پاکستان کرسچن پروفیشنلز اینڈبزنس مین ایسوسی ویوین وکٹر، صدر صادق سردار، سیکریٹری جنرل فیصل جوزف، کرنل شاہد، ایس ای سی پی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر شاہد نسیم، اسسٹنٹ کسٹم کنٹرولر ایلیسن اسٹیفن، راجر بینی، الفریڈنواب، سہیل چارلس، عابد گل ،کاشف ایلیسن ، بشارت اٹھوال، بشپ خادم بھٹو، نعمان مورس، ڈئنیل بھٹی، کمفرٹ لعزرس، جانسن شیروز کے علاوہ بڑی تعداد میں ممبران وعوام نے شرکت کی۔ اس موقع پر تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے سینئرسیاستدان عرفان اللہ خان مروت نے کہا کہ پاکستان کی تعمیر وترقی میں مسیحیوں کا کردارناقابل فراموش ہے،مسیحی افراد تعلیم، صحت اور زندگی کے مختلف شعبوں میں گرانقدر خدمات انجام دے رہے ہیں اور مسیحیوں کی وطن سے محبت اور وفاداری کسی بھی شک وشبے سے بالاتر ہے۔ عرفان اللہ خان مروت نے کہا کہ مسیحیوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرنے پر ویوین وکٹر اور پی سی پی اے بی اے کی پوری ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے ۔ اس موقع پر ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے روبن یامین نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسیحی زندگی کے ہرشعبہ میں مکمل ایمانداری اور جانفشانی کے ساتھ ملک کی خدمت میں مصروف ہیں اور جب بھی ضرورت پڑی مسیحی وطن عزیز کی عزت اور دفاع کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے۔ پاکستان کرسچن پروفیشنلز اینڈبزنس مین ایسوسی کے چیئرمین ویوین وکٹرنے کہا کہ ہرادارے اور ہر شعبے میں اہم خدمات انجام دینے والے مسیحیوں کیلئے کوایسا پلیٹ فارم نہیں تھا جہاں ہر طبقے اور ہر شعبے سے وابستہ افراد کی نمائندگی ہو اور اس لئے ہم نے پاکستان کرسچن پروفیشنلز اینڈبزنس مین ایسوسی کاپلیٹ فارم تمام مسیحی لوگوں کیلئے تیار کیا اور ملک کے مسیحی تاجر،صنعتکاراور ہرشعبے کے پروفیشنلز کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرنے کا خواب پوراہوگیاہے۔ تقریب میں پروقار عشائیہ دیاگیا اور کیک بھی کاٹا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.