Harassing girl Bahawalpur

لڑکی انگلش سیکھنے گئی‘لڑکے نے کچھ اور سکھا دیا‘ ۔۔۔توبہ توبہ

بہاولپور جدت ویب ڈیسک شادی کارشتہ بہت مقدس ہوتا ہے لیکن بعض لالچی افراد کی گھناﺅنی حرکات نے اس رشتے کے تقدس کو بھی پامال کرنا شروع کردیا ، ایسا ہی کچھ بہاولپور کی لڑکی کیساتھ ہوا جو جس کا دولہا شادی کے بعد گھر کا سامان لے کر ہی رفوچکر ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق ہما نامی لڑکی کی اپنے انگلش ٹیوٹر سکندر نامی شخص سے شادی ہوئی تھی جو کورٹ میرج کے بعد اپنی بیوی ہما کو چیمہ ٹاﺅن کے علاقے میں کرائے کے گھر میں رخصت کرکے لے کر گیا تھا لیکن خود دولہا اور سسرالی ہی اپنی بہو کے 47 ہزار نقدی، لیپ ٹاپ اور دیگر سامان اٹھا کر فرار ہوگئے۔ متاثرہ لڑکی ہما اپنے اہل خانہ کے ہمراہ کارروائی کے لیے تھانہ صدر پہنچ گئی۔ہمانے بتایاکہ ” ایک لڑکے کے پاس وہ انگلش سیکھنے جاتی تھی جس نے اسے شادی کیلئے پروپوز کیا، اہلخانہ سے بات کی تو یہ نہیں مانے لیکن بالآخر اجازت دیدی۔اب لڑکے کے والدین نہیں مان رہے تھے ، ڈیڑھ سال انتظار کے بعد ایک جامع مسجد میں گئے جہاں ایک قاری اور ایک بچے کو دولہا نے بلایا اور نکاح کیا لیکن دراصل یہ سب ڈرامہ تھا جس کا دستاویزی ثبوت بھی نہیں تھا اور نہ ہی پورے گواہ ، اس کے بعد وہ شادی سے ہی مکرگیا اور رابطہ ختم ہوگیا،دوسری طرف متاثرہ لڑکی ہما کے اہلخانہ کاکہناتھاکہ ” قانونی کارروائی کیلئے بہاولپور پولیس تھانہ صدر میں درخواست دیدی اور مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ پولیس اس سارے معاملے میں کیا کردار ادا کرتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.