قانون کی بالادستی قائم ہونے تک معاشرہ اوپر نہیں آسکتا، عمران خان

اسلام آباد:جدت ویب ڈیسک: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ قانون کی بالادستی قائم ہونے تک معاشرہ اوپر نہیں آسکتا

، طاقت ور کو قانون کے نیچے لانے تک قوم اوپر نہیں جاسکتی۔ رحمت العالمینۖ اسکالرشپ پروگرام کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمارے نبیۖ دنیا کے سب سے عظیم انسان ہیں، اور ان کی تعریف نہ صرف مسلمان بلکہ غیرمسلم بھی کرتے ہیں، لیکن میں آج تک نہیں دیکھا کہ ہم نے اپنے زندگیوں کو نبی ۖ کی سیرت اور تعلیمات میں ڈھالا ہو، وفاقی حکومت اسکالرشپ پروگرام میں تعاون کررہی ہے، اور ہر سال 5.5 ارب روپے 70 ہزار اسکالر شپ پرخرچ کرے گی، اور مجموعی طور پر ساڑھے 3 لاکھ اسکالر شپز دی جائیں گی، احساس پروگرام کیذریعے عوام کو ٹارگٹڈسبسڈی فراہم کر رہیہیں۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ قانون کی بالادستی قائم ہونے تک معاشرہ اوپر نہیں آسکتا، طاقت ور کو قانون کے نیچے لانے تک قوم اوپر نہیں جاسکتی، کمزور شخص جتنی بڑی چوری بھی کرلے لیکن وہ لندن میں فلیٹ نہیں لے سکتا، لیکن طاقتور آدمی اربوں کی چوری کرتا ہے اور اسے باہر لے جانا پڑتا ہے کیوں کہ اگر وہ پیسہ ملک میں رہے گا تو سب کو نظر آئے گا، عام آدمی کو انصاف ملے تو وہ اپنے ملک سے پیار کرتے گا، انصاف کی بالادستی اور تعلیم سے ہی ہمارا ملک فلاحی ریاست بنے گا۔، ہم مسجد میں تو اللہ اور اس کے رسول کی اطاعت کرتے ہیں لیکن مسجد سے باہر یہ کام نہیں ہوتا، جب کہ قرآن کہتا ہے کہ نبیۖ کی زندگی سے سیکھو اور ان کی سنت پر چلو۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمارا مقصد ہے کہ ہم اپنے نبیۖ کی تعلیمات کو عام آدمی کی زندگی میں لے کر آئیں اور ان کی سنتوں کو عام کریں، اپنی زندگیاں ری ماڈل کرناہماری سب سیبڑی کاوش ہوگی، تعلیم کے بغیر کوئی قوم اوپر نہیں جا سکتی

Leave a Reply

Your email address will not be published.