غیر معیاری اورزائدالمیعادانجکشن لگنے سے3 بچے جاں بحق جبکہ 7 کی حالت غیر

نوابشاہ جدت ویب ڈیسک نوابشاہ میں طبی عملے کی غفلت کے باعث خسرہ کے غیر معیاری اورزائدالمعیاد انجکشن لگنے سے3 بچے جاں بحق جبکہ 7 کی حالت غیر ہوگئی ہے، صوبائی وزیر صحت نے نوٹس لے لیا، خاتون ہیلتھ ورکر کی گرفتاری کے لئے پولیس نے چھاپہ ماراہے تاہم گرفتاری عمل میں نہیں آسکی۔زائد المعیاد انجکشن سے ہلاکتوں کا معاملہ نواب شاہ کے محلہ سعید آباد میں پیش آیا۔ہلاک ہونے والے بچوں کے والدین نے بتایاگزشتہ روز بچوں کو خسرے سے بچا ئوکے ٹیکے لگوائے تھے جوکہ غیر معیاری تھے۔ ان کے بچوں کی موت حفاظتی ٹیکے لگانے سے ہوئی ہے۔دوسری جانب پیپلز میڈیکل اسپتال لائے گئے دیگر 7 بچوں کی بھی حالت غیر ہو گئی ہے۔اسپتال کے ڈاکٹر مظہر کے مطابق بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے گئے تھے ، موت کی وجہ کیا ہے،تحقیقات کی جارہی ہیں ، اصل وجہ پوسٹ مارٹم کے بعد ہی سامنے آئے گی ، واقعے کے بعد ضلع بھر میں حفاظتی ٹیکوں کی مہم ملتوی کردی گئی۔صوبائی وزیر صحت سکندر میندھرونے نوٹس لیتے ہوئے کہاہے کہ یہ بہت افسوسناک واقعہ ہے، متاثرہ بچوں کو کراچی منتقل کررہے ہیں،جو دوائیں پلائی گئیں اس کی بھی تحقیقات ہوں گی۔انہوں نے کہا کہ ہزاروں بچو ں کی ویکسی نیشن کی جاتی ہے، کبھی کسی ڈرگ سے ری ایکشن ہوسکتا ہے، یا کسی کی غلطی بھی ہوسکتی ہے، جاں بحق بچوں سے متعلق تحقیقات ہوں گی، واضح ثبوت ملنے پر ایکشن لیا جائے گا۔دوسری جانب پولیس نے بتایاکہ بچوں کو ٹیکے لگنے والی لیڈی ہیلتھ ورکر کا پتا لگالیا ہے، لیڈی ورکر تحسین کی گرفتاری کے لیے گھر پر چھاپا مارا گیا، گھر میں تالا لگا تھا، جس کی وجہ سے کوئی گرفتاری نہیں ہوسکی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.