SBCA

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے کیسے شہر کا انفرااسٹرکچر تباہ کرنے کا منصوبہ بنالیا ‘جانئے

کراچی جدت ویب ڈیسک سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کا شہر انفراسٹرکچر تباہ کرنے کا منصوبہ ، ڈائریکٹر جنرل کے منظور نظر اورغیر قانونی تعمیرات میں شہرت رکھنے والے دونوں افسران گلشن اقبال میں او پی ایس ہونے کے باوجود تعینات،ڈپٹی ڈائریکٹر وقار میمن کو بھی گلشن اقبال ٹائون زون ون میں انچارج بناکر نواز دیا گیا ،گلشن اقبال کے مکینوں میں سخت خوف وہراس جبکہ ٹھیکیدار مافیا میں زبردست خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ذرائع کے مطابق سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں ڈائریکٹر جنرل آغا مقصود عباس سے قربت رکھنے والے افسران کو اہم ٹائونز میں تعینات کئے جانے کا سلسلہ جاری ہے،دلچسپ امر یہ ہے کہ عدالتی احکامات کے خلاف مذکورہ او پی ایس افسران تعینات کئے جارہے ہیں اور عدالتی کارروائی سے بچنے کیلئے انہیں انچارج کا نام دے رکھا ہے،جبکہ انچارج ڈائریکٹر کی حیثیت سے کس طرح دستخط کر سکتا ہے یہ ایک سوالیہ نشان ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈائریکٹر جنرل ایس بی سی اے آغا مقصود عباس نے اپنے منظور نظر افسر وقار میمن کی خواہش پر انہیں گلشن اقبال زون ون میں انچارج بناکر تعینات کردیا ہے، جبکہ اس سے قبل ان کے پاس شاہ فیصل اور کورنگی ٹائون کا چارج تھا جو ان سے واپس لیکر شاہ فیصل ٹائون میں جمیلہ جبین ،ڈائریکٹر لانڈھی محمد زبیر کو کورنگی ٹائون کا اضافی چارج دیدیا گیا ہے ،اسی طرح گلشن اقبال زون ون سے عبدالحمید زرداری کو ملیر تبادلہ کر کے وقار میمن کو گلشن اقبال زون ون کے چارج سے نوازا گیا ہے ،ذرائع کا کہنا ہے کہ غیر قانونی تعمیرات کی سرپرستی میں شہرت رکھتے والے وقار میمن کی تعیناتی کوشہری حلقوں نے گلشن اقبال ٹائون کے انفراسٹرکچر کی تباہی کا منصوبہ قرار دیدیا ہے۔ایس بی سی اے افسران کا کہنا ہے کہ پہلے ہی گلشن اقبال ٹائون میں غیر قانونی تعمیرات کی بھرمار ہے جبکہ وقار میمن کی تعیناتی کے بعد اس میں کئی گناہ اضافہ ہونے کا خطرہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.