روبوٹ نے سائنسدانوں کے چھکے چھڑادئیے ،جانیے

جدت ویب ڈیسک :فیس بک کے لیے ڈیزائن کردہ مصنوعی ذہانت کے شاہکار روبوٹ کو سائنس دانوں نے بند کردیا ہے اور اس کی وجہ روبوٹ کا اپنی ’لینگوئج از خود تیار کرنا ‘ بتایا جارہا ہے۔
تفصیلات کے مطابق سائسنسدانوں نے محسوس کیا کہ فیس بک کے لیے بنائے جانے والے روبوٹ اپنے خود کے کوڈ تشکیل دے رہا ہے‘ اس خبر کے منظرِ عام پر آتے ہی آرٹیفشل ذہانت سے جڑی تخیلاتی فلمیں گویا حقیقت کا روپ دھار گئی ہیں۔تحقیق کے اندر پیش آنے والے اس خطرنا ک موڑ پر سائنسدانوں کو سمجھ آیا کہ روبوٹ نے انگریزی زبان کا استعمال ترک کرکے ایسی زبان کا استعمال شروع کردیا ہے جسے مصنوعی ذہانت کا حامل دوسرا روبوٹ ہی سمجھ پارہا تھا۔facebook robotڈیجیٹل جرنل نامی سائنسی جریدے کو فراہم کردہ تفصیلات میں سائسنس دانوں نے بتایا کہ باب نے ایک جملہ کہا جس کے جوان میں ایلس نے بھی ایک جملہ کہا اور ان دونوں جملوں میں گرائمر کے بنیادی قوائد کی غلطی تھی جس کے سبب سائنس داں ایسا سمجھنے پر مجبور ہیں کہ مصنوعی ذہانت کا شاہ کار یہ روبوٹ خود کو درپیش آنے والی مشکلات کا حل نکالنے کے پہلے مرحلے میں داخل ہوچکے ہیںسائنسدانوں نے جب روبوٹ کی زبان سمجھنے کی کوشش کی تو ابتدا میں وہ انہیں کچھ مہمل الفاظ لگے تاہم مزید تحقیق سے ثابت ہوا کہ بوب اور ایلس نامی روبوٹ آپس میں ایک دوسرے سے از خود رابطہ کررہے ہیں۔

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.