Zubair Umar

حکومت چین کے سرمایہ کاروں کو ہر ممکن تعاون ، مدد اور معاونت بھی فراہم کرے گی، محمد زبیر

کراچی جدت ویب ڈیسک گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ پاک چین دو فطری اتحادی ہیں ،جغرافیائی ،محل وقوع اور عالمی حالات کی تبدیلی نے دو ممالک کو مزید قریب کردیا ہے جس کی واضح مثال سی پیک ہے ،منصوبہ سے دوممالک سمیت خطہ میں تیز ترین ترقی و خوشحالی کے نئے دور کا آغاز شروع ہوگا ، خطہ عالمی تجارتی منڈی ، معاشی واقتصادی سرگرمیوں کا مرکز اور عالمی تجارت میں کلیدی کردار ادا کرے گا، چین کے معروف گروپ کا صوبہ میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری میں بھرپو ر دلچسپی کا اظہار خوش آئند ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنر ہائوس میں چین کے معروف گروپ V-Flo اور اس کے پارٹنر Elionگروپ کے 7 رکنی وفد سے ملاقات میں کیا۔ وفد کی سربراہی V-Flo گروپ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر Kingston Wen کررہے تھے ۔ وفد میں V-Flo گروپ کے جنرل منیجر Allen He ،Elion گروپ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر Yan Xuesheng ،گروپ کے پاکستان میں پارٹنر محمد اسلم خٹک ، خواجہ غلام شعیب ،وسیم احمد اور امجد علی آصف شامل تھے ۔ ملاقات میں عالمی حالات ، دوطرفہ تعلقات ، تجارت ، سرمایہ کاری ، سی پیک ،سرمایہ کاروں کو حکومت کی فراہم کردہ سہولیات سمیت اہمیت کے حامل دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیاگیا ۔ گورنر سندھ نے مزید کہا کہ پاکستان کا معاشی حب کراچی سرمایہ کاری کے لئے پر کشش استعداد کا حامل شہر ہے جہاں پر سرمایہ کاری کے یقینی نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں ، معروف ملٹی نیشنل کمپنیاں شہر کی استعداد سے بھرپور استفادہ حاصل کرنے کے لئے مزیدسرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتی ہیں ، پاکستان چینی کمپنیوں کی شہر میں سرمایہ کاری کا خواہاں ہے تاکہ دو طرفہ تعلقات مزید مستحکم و مضبوط ہو سکیں ، چینی سرمایہ کاری سے خطہ میں بے روزگار ی اور غربت کا خاتمہ یقینی ہے اس ضمن میں حکومت چین کے سرمایہ کاروں کو ہر ممکن تعاون ، مدد اور معاونت بھی فراہم کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کی تکمیل سے قبل چینی سرمایہ کاروں کی شہر میں دلچسپی خوش آئند اور منصوبہ کی افادیت کو مزید اجاگر کرے گی ، چینی کمپنیاں انرجی ،تعلیم ، صحت ، انفرااسٹرکچر اوردیگرشعبوں میں سرمایہ کاری کریں انھیں مطلوبہ فوائد حاصل ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ ایک زرعی صوبہ ہے جہاں زراعت کے شعبہ میں سرمایہ کاری کی بڑی گنجائش ہے جبکہ کول مائنز ، انرجی اور دیگر شعبہ بھی پرکشش اہمیت کے حامل ہیں ، تھر میں انرجی سیکٹر میں ساڑھے چا ر ارب ڈالرزکی سرمایہ کاری سے کام ہورہا ہے جن میں انفرااسٹرکچر کی بحالی و ترقی ، تعلیم اور صحت سمیت دیگر شعبوں پر کام جاری ہے ۔ گورنر محمد زبیر نے کہا کہ چین کی عالمی تنہائی ختم کرانے میں پاکستان نے بھرپور ساتھ دیا یہ وہ وقت تھا جب چین کے معاشی حالات مستحکم نہیں ہوئے تھے ، آج چین کو سپر پاورز کی صف میں کھڑا دیکھ کر پاکستانیوں کو بے حد خوشی ہوتی ہے ، پاکستان ماضی کی طرح آج بھی اپنے ہمسایہ دوست چین کے ساتھ خلوص نیت کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہے یہی وجہ ہے کہ پاک چین دوستی کی نظیر پوری دنیا میں کہیں نہیں ملتی دونوں ممالک کی دوستی نہ صرف حکومتی سطح پر قائم ہے بلکہ یہ عوامی سطح پر بھی مضبوطی سے مستحکم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان یا چین میں کسی کی بھی حکومت ہو پاک چین دوستی کو سب قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اس لئے حکومتوں کی تبدیلی سے بھی دونوں ممالک کی دوستی مزید مضبوط اور مستحکم ہے ۔ ملاقات میں V-Flo گروپ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر نے گورنر سندھ کو بتایا کہ 16 برس قبل V-Flo گروپ نے عالمی سطح پر تجارتی سرمایہ کاری کا آغاز پاکستان سے کیا تھا آج گروپ 50 سے زائد ممالک میں سرمایہ کاری کررہا ہے ، V-Flo گروپ تھر میں سرمایہ کاری میں بھرپور دلچسپی رکھتا ہے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ گروپ کو کم لاگت رہائشی اسکیموں کا وسیع تجربہ ہے اس ضمن میں کراچی کے مختلف علاقوں میں کم لاگت رہائشی اسکیم پر سرمایہ کاری کرنے پر سنجیدگی سے کام کررہے ہیں ، دیگر شعبوں میں بھی گروپ کی سرمایہ کاری متوقع ہے ، زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری سے پاک چین تعلقات کو مزید فروغ دینے اور سی پیک سے قبل سرمایہ کاری سے منصوبہ کی افادیت سے بھرپور استفادہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے بتایاکہ 21 وی صدی میں شمسی توانائی ایک منافع بخش اور ماحول دوست منصوبہ ہے اس ضمن میں گروپ پی وی پاور ، سولر تھر مل اور ونڈ پاور پر کام کررہا ہے جبکہ گروپ توانائی کے حصول کے لئے خدمات ، تیکنیکی مہارت اور آلات کی فراہمی بھی کررہا ہے جبکہElion گروپ ماحول کے تحفظ کے ضمن میں منصوبوں پر ترجیحی بنیادوں پر کام کرتا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.