parents protest against school fees

اسکول فیس میں من مانے اضافے پروالدین کااحتجاج

کراچی جدت ویب ڈیسک کراچی میں نجی اسکولوں کی جانب سے فیسوں میں اضافے کے خلاف والدین نے مظاہرہ کیا اور نجی اسکولوں کی انتظامیہ سے اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کیا۔پرائیویٹ اسکولوں کی جانب سے فیسوں میں من مانے اضافے کے خلاف والدین سراپا احتجاج بن گئے ۔تفصیلات کے کراچی کے نجی اسکولوں نے تعلیم کو کاروبار بنا لیا ۔فیس میں بیس سے پچیس فیصد اضافے کے خلاف والدین سڑکوں پر نکل آئے۔کراچی کی شارع فیصل پر طلبا نے والدین کے ساتھ مل کر احتجاج کیا جس میں سول سوسائٹی کی بڑی تعداد شریک ہوئی ۔والدین کاموقف ہے کہ قانون کے مطابق فیس لیں۔ یکمشت اتنے اضافے کے خلاف اسکول کے سامنے ریلی نکالی گئی ۔والدین نے دہائی دی کہ خدارا،تعلیم کو کاروبار نہ بنائیں، جب دل چاہتا ہے فیسوں میں من مانا اضافہ کر دیا جاتا پے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں۔آل سندھ پیرنٹس ایسو سی ایشن کے جوائنٹ سیکریٹری رضوان علی کا کہنا تھا کہ نجی اسکولز الدین کو بلیک میل کر رہے ہیں، سرکاری اسکول میں معیاری تعلیم نہ ہونے کی وجہ سے والدین کی مجبوری کا فائدہ اٹھایا جارہا ہے۔والدین نے مطالبہ کیا کہ قانون کے مطابق 5فیصد اضافہ کیا جائے، من مانے اضافے کو روکا جائے۔انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ فیسوں میں اضافہ قانون کے مطابق کیا جائے۔واضح رہے کہ سندھ ہائی کورٹ اسکولوں کی فیسوں میں سالانہ پانچ فیصد سے زائد اضافے کو غیرقانونی قرار دے چکی ہے۔سندھ ہائی کورٹ کے دورکنی بینچ نے نجی اسکولوں کی جانب سے فیسوں میں من مانے اضافے کے خلاف کیس میں قرار دیا تھا کہ قانون کے مطابق پرائیویٹ اسکولز فیس میں سالانہ پانچ فیصد سے زیادہ اضافہ نہیں کرسکتے۔ اسکول انتظامیہ کی اپیل پر سپریم کورٹ نے معاملہ ازسر نو سماعت کیلئے سندھ ہائی کورٹ کو بھجوادیا تھا ۔ دو رکنی بینچ نے دوبارہ سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرکھا ہے۔قانونی ماہرین کے مطابق سپریم کورٹ نے سندھ ہائی کورٹ کا سابقہ حکم ختم نہیں کیا اس لیے اسکولوں کی جانب سے فیسوں میں پانچ فیصد سے زائد اضافہ غیرقانونی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.