Islamabad Dharna Pakistan

اسلام آباد دھرنا‘ ڈیڈ لائن ختم ‘ آپریشن کی تیاریاں مکمل

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک راولپنڈی اورا سلام آباد کو ملانے والے فیض آباد پر دھرنا دینے والوں کووفاقی دارالحکومت کی انتظامیہ نے رات 10 بجے تک دھرنا ختم کرنے کی ڈیڈلائن دی تھی ،جو ختم ہوگئی۔انتظامیہ نے اسلام آباد کے داخلی راستوں کو عام ٹریفک کے لیے بند کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے ، ہائیکورٹ نے کل صبح تک ہر صورت دھرنا ختم کرانے کی ہدایت کررکھی ہے۔وفاقی دارالحکومت میں دھرنا ختم کرانے کے لئے انتظامیہ نے آپریشن کی تیاریاں مکمل کرلیں،جڑواں شہروں کے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔انتظامیہ کی جانب سے فیض آباد اور آئی ایٹ کے مکینوں کو غیر ضروری طور پر گھر سے باہر نہ نکلنے اور لوگوں کو کل دکانیں نہ کھولنے کی ہدایت کی گئی ہے۔دھرنے کی ڈیڈلائن ختم ہونے کے بعد انتظامیہ نے ہائیکورٹ کے حکم کی تعمیل کے لئے راولپنڈی اور گردونواح کی پولیس کو بھی بلالیا ہے۔علاوہ ازیں وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ ختم نبوتﷺ پر جتنا ایمان جبہ و دستار والوں کا ہے ، اتنا ہی یقین کامل جینز اور کوٹ پہننے والوں کا ہے، اس مسئلے پر بے بنیاد پروپیگنڈہ کیا جا رہا ہے، پارلیمنٹ نے ختم نبوت ﷺ کی ایسی مہر آئین پاکستان میں لگا دی ہے جسے قیامت تک کوئی مٹا نہیں سکتا، وفاقی حکومت دھرنے کے شرکاءکے ساتھ دوبارہ مذاکرات کے لئے تیار ہیں، شہریوں کو تنگ کرنا بند نہ ہوا تو مجبورا اسلام آباد ہائیکورٹ کے احکامات پر عمل کرنا پڑے گا۔ اس وقت ہم ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں کہ اس مسئلے کا پرامن حل نکالا جائے مگر کوئی بھی گروپ اگر ریاست کی رٹ کو چیلنج کرے گا تو ان کے ساتھ سختی سے نپٹا جائے گا۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ دھرنوں کے ذریعے پاکستان کو معاشی طور غیر مستحکم بنایا جا رہا ہے ، پاکستان دشمن عناصر دھرنے کو بنیاد بنا کر ملک کے خلاف پروپیگنڈہ کر رہے ہیں اور عالمی سطح پر پاکستان کو بدنام کرنے کے لئے یہاں کی تصاویر استعمال کر تے ہیں۔پیر کو چین کا اعلیٰ سطحی وفد پاکستان کا دورہ کر رہا ہے اور اس موقع پر اسلام آباد میں دھرنا چینی حکام کو اچھا پیغام نہیں دے گا۔ ختم نبوت ﷺپر جھوٹا پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے اور سوشل میڈیا پر لوگوں کے جذبات ابھارنے کے جھوٹے بیانات دیئے جا رہے ہیں۔ ختم نبوت پریقین مال اوراولادسے زیادہ عزیزہے، جب تک ختم نبوت پریقین نہ ہوکوئی مسلمان نہیں ہوسکتا۔ملک میں الیکشن ایکٹ میں ترمیم کی وجہ سے تنازع کھڑاہوا اور جس ترمیم پرتنازع کھڑاہواوہ زاہدحامدیاحکومت نے نہیں کیا، اس ترمیم کو تمام سیاسی جماعتوں نے مل کرمرتب کیا۔ ایک سنیٹر نے الیکشن ایکٹ میں ترمیم کی بات کی تو وزیر قانون زاہد حامد نے اس سینیٹر کی بھرپور حمایت کی۔ وزیر داخلہ کا مزید کہنا تھا کہ جلوس نکالنا اور احتجاج کرنا سب کابنیادی حق ہے مگر اسلام آباد میں دھرنا دینے والوں نے دھوکے کے ساتھ پنجاب حکومت سے اجازت لی، امیدتھی کہ یہ لوگ احتجاج ریکارڈکراکے رخصت ہوجائیں گے مگر انہوں نے ایسا نہیں کیا،اسلام آباداورراولپنڈی کے عوام دھرنے کی وجہ سے پریشان ہیں، دھرنے کے شرکاءنے جڑواں شہروں کے باسیوں کا جینا دو بھر کردیا ہے، راستے بندکرنانبی کریمﷺکی تعلیمات کے برعکس ہے۔ انہوں نے دھرنے کے شرکاءسے اپیل کی وہ شہریوں کی زندگی آسان بنائیں کیوں کہ دھرنے کی وجہ سے پریشان شہری اذیت ناک صورت حال سے تنگ آکر ان پر حملہ کر سکتے ہیں۔ ہمیں خبر ملی ہے کہ دھرنے کے شرکاءمیں چند لوگوں مسلح ہیں اور ان کی خواہش ہے کہ ملک میں افراتفری پیدا ہو لیکن وہ ہماری خاموشی کو کمزوری نہ سمجھیں کیوں کہ ہمیں اپنے اداروں پر مکمل بھروسہ ہے ، ادارے ان لوگوں سے نپٹنے کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.