اب پاکستان میں ادویات اپنا اتا پتا بھی بتائیں گی،کیسے؟ جانیے

کراچی جدت ویب ڈیسک پاکستان میں پہلی بار ادویات کے ڈبوں پربارکوڈ لگادیے گئے جس سے پاکستان ان ممالک کی فہرست میں شامل ہو گیاہے جہاں تمام ادویات پر بار کوڈز لگائے گئے ہیں۔اس ضمن میںوزارت قومی صحت کے ذرائع نے بتایاکہ پاکستانی دوائو ںکی برآمد میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ملکی تاریخ میں پہلی بار دوائوں کی پیکنگ کے پیکٹس اور ڈبوں پر بار کوڈز لگائے گئے ہیںجس سے پاکستان ان ممالک کی فہرست میں شامل ہو چکا ہے جہاں پر بین الاقوامی مروجہ بہترین پریکٹس جاری ہے اور اس سے ملکی برآمدات میں تیزی آئی ہے، اس اقدام سے نہ صرف مریضوں کو معیاری دوائیں دستیاب ہوںگی بلکہ اس سے جعلی دوائوں کا بھی خاتمہ ہو گا۔حکام نے کہاکہ موجودہ حکومت کے دور میںدوائوں کے ریگولیٹری نظام میں بہتری آئی ہے اور4سال کے دوران دواسازی کے شعبے میں ترقی ہوئی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کی ادویہ سازی کی قومی صنعت وزارت صحت اور ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان دوائوں کی برآمد کے اہداف پورے کرنے میں ہماری شراکت دار ہے اور یہ ملکی ضروریات پوری کرنے کے ساتھ ساتھ 40 ممالک کو معیاری دوائیں کی برآمد کا ہدف موثر طور پر پورا کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ڈریپ (ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی)اور انڈسٹری کی استعداد کار میں اضافہ کے لیے صحت کے عالمی ادارہ اور ایس پی جیسے شراکت ا داروں کے اشتراک سے2سال کے دوران متعدد تربیتی ورکشاپس اور سیمینار ز منعقد کرائے گئے جن میں دوا سازی سے متعلقہ 500 افراد نے تربیت حاصل کی، پاکستان سے دواں کی برآمد میں اضافہ ہوا جو کہ ماضی میں کم ہو گیا تھا،ڈریپ نے رجسٹریشن کیلیے تیز تر سسٹم متعارف کرایا ہے جس کے تحت اب رجسٹریشن کی درخواستیں 2روزکے اندر اندر نمٹا دی جاتی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.