ہمیں بنگلہ دیش کی انڈر 19 کی ٹیم سے سیکھنا چاہیے، بنگلہ دیشی کپتان مومن الحق

Momin ul Haq Bangladesh Captain
February 10, 2020 5:43 pm

راولپنڈی جدت ویب ڈیسک :بنگلہ دیشی کپتان مومن الحق نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں شکست پر افسوس اور شرمندگی کا اظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ کارکردگی پر مایوسی ہے،بنگلہ دیش کی 19ٹیم نے اچھی کار کر دگی دکھائی ،ہمیں بنگلہ دیش کی انڈر 19 کی ٹیم سے سیکھنا چاہیے، پاکستانی بائولرز نے شاندار بائولنگ کی، شکست پر کوئی جواز پیش نہیں کیا جاسکتا، ہر ٹیم کو ہوم گراؤنڈ کراوڈ کا فائدہ ہوتا ہے، ہماری طرف سے پارٹنر شپ اور سنچری نہیںبنی جس کی وجہ سے نقصان ہوا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مومن لحق نے کہا کہ ہم جو نیر کے لیے مثال ہیں، ہم نے میچ سے کافی سیکھا ہے، آگے آٹھ سے دس ٹیسٹ میچ ہیں جس میں اپنی غلطیوں سے سیکھیں گے۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان آکر خوشی ہوئی، اچھے انتظامات تھے ۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ نسیم شاہ پاکستان کا مستقل ہے اس میں غصہ ہے جو فاسٹ بائولر کے لیے ضروری ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہماری اور پاکستان کی ٹیم میں صرف بیٹنگ کا فرق تھا، پاکستان کی بائولنگ بھی اچھی تھی، ہر کسی ملک کو ایک دوسرے کے خلاف کھیلنا چاہیے۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ پاکستان نے بہت اچھے کھیل کا مظاہرہ کیا،پاکستانی ٹیم کی بیٹنگ اور باؤلنگ اچھی تھی،پاکستان کے ٹارگٹ تک پہنچنا آسان نہیں تھا۔ انہوںنے کہاکہ ہمیں 100 رنز کی پارٹنر شپ کہ ضرورت تھی ہم ناکام رہے۔ ایک سوا ل پر انہوںنے کہاکہ اگر آپ کسی سینئر یا جونیئر سے سیکھتے ہیں تو اچھی بات ہوتی ہے،ٹیسٹ میچ میں ہمیں بہتر کارکردگی کے لیے اچھی تیاری کرنی ہے۔ انہوںنے کہاکہ ہمیں اس کھیل سے بہت سیکھنے کا موقع ملا،ہم اپنی ٹیم کی خامیوں کو پورا کرنے کی کوشش کرینگے۔انہوںنے کہاکہ پاکستان کے پاس ہوم گراؤنڈ تھا اور پچ کی سمجھ تھی۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ ہمیں بنگلہ دیش کی انڈر 19 کی ٹیم سے سیکھنا چاہیے انہوں نے اچھی کارکردگی دکھائی۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کرکٹ کے اچھے مستقبل کے خواہاں ہیں،میچ کی بدلتی صورتحال سے فائدہ اٹھانا چاہیے ہم نے کوشش بھی کی،

متعلقہ خبریں